بنگلہ دیش : روہنگیا پناہ گزینوں کی کشتی غرقاب ، 20 لاشیں برآمد ، مہلوکین میں بیشتر خواتین اور معصوم بچے

یہ لوگ روہنگیا میانمار میں تازہ تشدد کے واقعات کے بعد اپنی کشتی کے ذریعہ بنگلہ دیش کی طرف منتقل ہونے کی کوشش کررہے تھے۔

Aug 31, 2017 06:17 PM IST | Updated on: Aug 31, 2017 06:17 PM IST

کوکس بازار: بنگلہ دیش کے سرحدی محافظ دستہ نے جمعرات کو ندی سے 20 روہنگیا پناہ گزینوں کی لاشیں برآمد کی ہيں، جن میں بیشتر خواتین اور بچے ہيں۔ یہ روہنگیا میانمار میں تازہ تشدد کے واقعات کے بعد اپنی کشتی کے ذریعہ بنگلہ دیش کی طرف منتقل ہونے کی کوشش کررہے تھے۔ بنگلہ دیشی حکام نے آج یہ اطلاع دی ہے۔  یہ حادثہ ایسے وقت میں ہوا ہے، جب میانمار میں روہنگیا باغیوں کے حملے اور فوج کی کارروائی میں تشدد کا نشانہ بنائے جانے کے بعد ہزاروں پناہ گزین بنگلہ دیش کی سرحد پر بے سرو سامانی کی حالت جمع ہوگئے ہيں، جنہیں پناہ دینے کے لئے بنگلہ دیش پر دباؤ ڈالا جارہا ہے۔

مہاجرین کی عالمی تنظیم کے مطابق بنگلہ دیش کی طرف سے سختی برتنے کے باوجود گزشتہ جمعہ سے اب تک 18 ہزار 500 رہنگیا مسلم کسی طرح بنگلہ دیش میں داخل ہوچکے ہيں، جن میں اکثر بیمار یا گولی لگنے سے زخمی ہیں۔ میانمار میں روہنگیا باغیوں کے حملے کے بعد فوج کی سخت کارروائی میں جنوب مغربی صوبہ راخین میں وسیع پیمانے پر رہنگیا آبادی کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا ہے، جہاں ہزاروں کی تعداد میں روہنگیا مسلمان فرار ہونے پر مجبور ہوئے ہیں۔ علاقے سے میانمار حکومت نے غیر مسلم بدھسٹ آبادی کو خالی کرلیا ہے، جہاں تازہ جھڑپوں میں کم سے کم 117 افراد ہلاک ہوئے ہيں، جن میں بیشتر روہنگیا باغی ہیں اور چند فوجی جوان بھی شامل ہيں۔

بنگلہ دیش : روہنگیا پناہ گزینوں کی کشتی غرقاب ، 20 لاشیں برآمد ، مہلوکین میں بیشتر خواتین اور معصوم بچے

روہنگیا مہاجری : فوٹو رائٹر

بنگلہ دیشی سرحدی محافظ دستہ کے کمانڈر عارف الاسلام نے بتایا کہ بنگلہ دیش اور میانمار کو ایک دوسرے سے الگ کرنے والی ناف ندی کے بنگلہ دیشی کنارے پر آج 11 بچوں اور 9 خواتین لاشیں تیرتی ہوئی ملی ہيں، جن کی کشتی ندی میں غرقاب ہوگئی تھی۔ انہوں نے بتایا کہ اس سے قبل بدھ کو بھی دو روہنگیا خواتین اور دو بچوں کی لاشیں ملی تھیں، جن کی کشتی پر میانمار کی سرحدی پولس فائرنگ کردی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز