دمشق میں روس اور شام کے طیاروں کی زبردست بمباری، 27 افراد ہلاک، درجنوں زخمی

Dec 04, 2017 12:32 PM IST | Updated on: Dec 04, 2017 12:32 PM IST

اومان۔  شام کے دارالحکومت دمشق کے قریب رہائشی علاقوں میں زبردست بمباری میں کم از کم 27 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے۔ بم گرانے والے جنگی طیارہ کو روس اور شام حکومت کا تصور کیا جا رہا ہے۔ جنگ معائنہ کار، مدد کرنے والے اہلکاروں اور مقامی لوگوں نے آج اس بمباری کی تصدیق کی ہے۔ شہری سیکورٹی اہلکاروں نے کہا کہ حموريہ میں رہائشی علاقے کے قریب مارکیٹ پر ہوئے فضائی حملوں میں کم از کم 17 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

گزشتہ 24 گھنٹے میں مشرقی دمشق کی گھنی آبادی والے کئی شہروں پر کم از کم 30 حملے کئے جا چکے ہیں۔ اربین میں چار شہری مارے گئے ہیں. اس کے علاوہ مصرابہ اور هاراستہ میں بھی حملوں میں لوگوں کے مارے جانے کی اطلاعات ہیں۔ شام میں انسانی حقوق کی مبصر کے مطابق گزشتہ 20 دنوں سے جاری فضائی حملوں میں سب سے زیادہ لوگ کل مارے گئے ہیں۔ اس دوران 200 سے زیادہ شہری ہلاک ہو گئے ہیں۔ان میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں۔

دمشق میں روس اور شام کے طیاروں کی زبردست بمباری، 27  افراد ہلاک، درجنوں زخمی

جنگ انسپکٹر، مدد کرنے والے اہلکاروں اور مقامی لوگوں نے آج اس بمباری کی تصدیق کی ہے۔: تصویر، یو این آئی۔

تاہم، روس اور شام کی حکومت نے شہری مقامات پر بم گرانے کی بات سے انکار کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ان کے لڑاکا طیارے صرف دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔باغیوں سے علاقے کی بازیابی کے لئے مشرقی غوطہ سال 2013 سے فوجی محاصرہ میں ہے۔ حکومت نے گزشتہ تین ماہ میں اس محاصرے کو سخت کر دیا ہے۔ یہاں کے باشندوں اور امداد ی اہلکاروں کا الزام ہے کہ بھوک کو جنگ کے ہتھیار کے طور پر جان بوجھ کر استعمال کیا جا رہا ہے۔ حکومت ان الزامات سے انکار کرتی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز