افغانستان : امریکی سفارتخانہ کے نزدیک فوجی اسپتال پر آئی ایس کا حملہ ، 30 ہلاک ، ہندوستان نے کی مذمت

Mar 08, 2017 09:16 PM IST | Updated on: Mar 08, 2017 09:16 PM IST

کابل: افغانستان کی راجدھانی کابل میں امریکی سفارتخانہ کے نزدیک فوجی اسپتال میں آج ہوئے حملے میں 30افراد کی موت اور کئی دیگر زخمی ہوگئے۔ اسلامک اسٹیٹ( آئی ایس) نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔ وزارت دفاع کے ترجمان نے یہ اطلاع دی۔ ترجمان اس سے قبل اس واقعہ میں کم از کم تین افراد کے مارے جانے کی خبر دی تھی لیکن اسپتال کے احاطہ میں واقع عمارتوں کی تفتیش کے بعد مرنے والوں کی تعداد میں تبدیلی کی گئی ہے۔

آئی ایس کی خبر رساں ایجنسی عماق نے کہا کہ آئی ایس کے جنگجوؤں نے اسپتال پر حملہ کیا ہے۔ تنظیم نے کئی معروف شیعہ مقامات کے ساتھ ساتھ کابل کے کئی ہائی پروفائل حملے کیے ہیں جن میں شہریوں کو نشانہ بنایا گیا۔ طالبان کے ایک ترجمان نے اس حملے سے کسی طرح کا تعلق ہونے سے انکار کیا ہے۔ ایک سیکورٹی افسر کے مطابق محمد دور خان اسپتال کے پچھلے حصے میں ایک خودکش حملہ آور نے خود کو اڑا لیا اور تین حملہ آور خود کار ہتھیاروں اور دستی بم لے کر اسپتال کے احاطے میں داخل ہوگئے۔

افغانستان : امریکی سفارتخانہ کے نزدیک فوجی اسپتال پر آئی ایس کا حملہ ، 30 ہلاک ، ہندوستان نے کی مذمت

حکام نے کہا کہ بندوق بردار طبی عملہ کے لباس میں اسپتال میں گھس آئے اور اوپری منزل پر پہنچ گئے جہاں پر سیکورٹی فورسز کے ساتھ تصادم شروع ہو گیا۔ سیکورٹی فورسز نے علاقے کا محاصرہ کر لیا ہے۔ اسپتال کے اندر دھماکوں کی آوازیں سنی گئیں۔ وزارت دفاع کے ترجمان دولت وجری نے کہا کہ ہمارے سلامتی دستوں کے جوان وہاں موجود ہیں اور شدید لڑائی جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک حملہ آور کو مار دیا گیا ہے۔اس دوران فوج کے ایک جوان کی موت اور تین دیگر زخمی ہو گئے۔

کابل حملے کی ہندوستان نے کی مذمت

ادھر ہندوستان نے کابل میں سردار داؤد خان اسپتال پر خودکش حملے کی آج سخت مذمت کی۔ وزارت خارجہ نے یہاں ایک بیان میں کہا کہ اسپتال پر ہوئے اس گھناؤنے حملے میں بڑی تعداد میں معصوم لوگوں کے مارے جانے پر ہندوستان رنج وغم کا اظہار کرتا ہے اور حملے کی سخت مذمت کرتا ہے۔ بیان میں کہا گیا کہ ہندستان دہشت گردی کے خلاف لڑائی میں افغانستان کے ساتھ ہے اور دہشت گردوں کو سخت سزا دیئے جانے کے حق میں ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز