حلب : عشا کی نماز کی ادائیگی کے دوران روسی طیاروں کا مسجد پر حملہ ، 42 افراد جاں بحق

Mar 17, 2017 12:59 PM IST | Updated on: Mar 17, 2017 01:00 PM IST

حلب : شام کے جنگ سے تباہ حال شہر حلب میں ایک مسجد میں نماز ادا کرنے والے مسلمانوں کو نشانہ بناکر کئے گئے حملے میں کم از کم 42 نمازیوں کے مارے جانے کی خبر ہے ۔ انسانی حقوق کے ادارے شامی آبزرویٹری کے مطابق یہ واقعہ شمالی شام میں باغیوں کے زیر انتظام الجینہ علاقہ میں اس وقت پیش آیا جب بمبار طیاروں نے ایک مسجد پر فضائی حملہ کردیا۔ بمباری کے نتیجے میں 42 افراد جاں بحق اور درجنوں زخمی ہوئے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق برطانیہ سے شام میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے ادارے شامی آبزرویٹری برائے انسانی حقوق کا کہنا ہے کہ جب یہ حملہ ہوا اس وقت مسجد میں عشا کی نماز ادا کی جا رہی تھی۔ تنظیم کے مطابق مارے جانے والوں میں زیادہ تر عام شہری ہیں۔بعض ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ فی الحال یہ واضح نہیں ہے کہ یہ فضائی کارروائی کس کی جانب سے کی گئی ہے لیکن روسی اور شامی طیارے اس علاقے میں پرواز کرتے رہتے ہیں۔

حلب : عشا کی نماز کی ادائیگی کے دوران روسی طیاروں کا مسجد پر حملہ ، 42 افراد جاں بحق

file photo

تاہم سماجی کارکنوں کا کہنا ہے کہ روسی فوج کے جنگی طیاروں نے نماز عشاء کے وقت الجینہ قصبے پر وحشیانہ بمباری کی۔ بمباری کے دوران کئی بم ایک مسجد میں نماز ادا کرتے مسلمانوں پر آگرے جس کے نتیجے میں نمازیوں کا قتل عام ہوا ہے۔ روسی جنگی طیاروں کی پروازوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔یہ کارروائی ایک ایسے وقت میں کی گئی ہے جب گذشتہ روز ہی دمشق میں ایک عدالت کی عمارت میں خودکش حملہ ہوا جس کے نتیجے میں کم از کم 31 افراد مارے گئے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز