پاکستان میں مسلکی تشدد میں پانچ افراد ہلاک

Oct 09, 2017 07:13 PM IST | Updated on: Oct 09, 2017 07:13 PM IST

کوئٹہ۔  جنوب مغربی پاکستان میں بندوق برداروں نے آج ہزارہ شیعہ فرقے سے تعلق رکھنے والے پانچ افراد کو گولیوں سے چھلنی کردیا۔ ہزارہ طبقے کو نشانہ بنانے کا ایک مہینے کے اندر یہ دوسرا واقعہ ہے۔ پولیس حکام نے بتایا کہ کوئٹہ میں موٹر سائیکل سوار حملہ آورو ں نے ایک ٹرک پر گولیاں برسائیں جس میں ہزارہ شیعہ سوار تھے۔ اس فائرنگ میں پانچ افراد ہلاک ہوگئے۔

ٹرک میں سوار لوگ بازار میں سبزیاں فروخت کرنے جا رہے تھے۔ سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ ملک نثار نے رائٹر کو بتایا کہ یہ ایک مسلکی تشدد کا واقعہ ہے جس میں پانچ افراد موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔ فائرنگ کے بعد حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ۔ ابھی تک کسی بھی گروپ نے حملہ کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

پاکستان میں مسلکی تشدد میں پانچ افراد ہلاک

کوئٹہ میں تقریباً پانچ لاکھ ہزارہ شیعہ آباد ہیں جس میں سے بیشتر افغانستان میں جاری تشدد کی وجہ سے چار دہائی پہلے یہاں آئے تھے۔ : گیٹی امیجیز۔

کوئٹہ میں تقریباً پانچ لاکھ ہزارہ شیعہ آباد ہیں جس میں سے بیشتر افغانستان میں جاری تشدد کی وجہ سے چار دہائی پہلے یہاں آئے تھے۔ ہزارہ شیعہ کوافغانستان اور پاکستان میں طالبان آئی ایس دہشت گردوں اور دیگر سنی دہشت گرد تنظیموں کی طرف سے باربار نشانہ بنایا جاتا رہا ہے۔ بلوچستان میں پچھلے دو برسوں میں ایسی فائرنگ کے واقعات میں اس طبقے کے 20 سے زائد افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز