موغادیشو میں دھماکوں میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 85 ہوگئی

موغادیشو۔ صومالیہ کے دارالحکومت موغادیشو میں ہفتے کے روز دو مصروف مقامات پر ہوئے دھماکوں میں مرنے والوں کی تعدادبڑھ کر 85 ہوگئی۔

Oct 15, 2017 08:29 PM IST | Updated on: Oct 15, 2017 08:29 PM IST

موغادیشو۔  صومالیہ کے دارالحکومت موغادیشو میں ہفتے کے روز دو مصروف مقامات پر ہوئے دھماکوں میں مرنے والوں کی تعدادبڑھ کر 85 ہوگئی۔ یہ سال 2007 میں اسلام پسندوں کی شورش کے آغاز کے بعد ہوئے محلق ترین حملوں میں سے ایک ہے۔ پولیس نے بتایا کہ k5 انٹرسیشکن پر واقع ایک ہوٹل کے باہر دھماکہ خیز مادوں سے بھرے ایک ٹرک میں دھماکہ ہونے سے متعدد عمارتیں زمیں بوس ہوگئیں اور درجنوں گاڑیوں میں آگ لگ گئی۔ یہ دھماکہ جس جگہ ہوا وہاں سرکاری دفاتر ، ریستوراں اور چھوٹی موٹی دکانیں ہیں۔

اس دھماکے کے دو گھنٹے بعد دارالحکومت کے مدینہ ضلع میں دوسرا دھماکہ ہوا۔ ایک پولیس اہلکار محمد حسین نے رائٹر کو بتایا کہ ان دونوں دھماکوں میں 85 افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ 100 دیگر زخمی ہوئے ہیں۔ پولیس نے اس سے قبل مرنے والوں کی تعداد 22 بتائی تھی۔ ابھی تک کسی نے ان دھماکوں کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے لیکن القاعدہ کا اتحادی گروپ الشباب اکثر وبیشر اس طرح کے حملے کرتا ہے۔

موغادیشو میں دھماکوں میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 85 ہوگئی

صومالیہ میں اقوام متحدہ کی امدادی مشن (یو این ایس او ایم) نے ٹوئٹر پر ہفتہ کو موغادیشو میں عام شہریوں کو نشانہ بنا کر انتہائی بہیمانہ بمباری کی مذمت کی ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز