اس بچے کی بھوک نے ماں۔ باپ کو بنا دیا بھکاری

آپ نے کبھی ایسے بچے کے بارے میں سنا ہے جس کا وزن ہاتھی کے وزن کے برابر ہو۔

Oct 15, 2017 07:26 PM IST | Updated on: Oct 15, 2017 07:26 PM IST

نئی دہلی۔ موٹاپا اپنے آپ میں ایک بہت بڑی بیماری ہے۔ اسے کم کرنے کے لئے لوگ کیا کیا نہیں کرتے ہیں؟ آپ نے کبھی ایسے بچے کے بارے میں سنا ہے جس کا وزن ہاتھی کے وزن کے برابر ہو۔ جی ہاں، ہم صرف 10 سال کی عمر کے لڑکے کے بارے میں بات کر رہے ہیں۔ انڈونیشیا میں رہنے والے اس بچے کا نام آیرا سومانتری ہے۔ یہ بچہ نہ صرف دن میں بلکہ رات میں بھی کئی بار کھانا کھاتا ہے۔ اس کی وجہ سے اس کا وزن تقریبا ایک ہاتھی کے برابر ہے۔

رپورٹوں کے مطابق، آئرا اگر ایک جگہ بیٹھ جائے تو اسے اٹھنے میں بڑی دقت ہوتی ہے۔ اب اس کے والدین اسے ڈائٹنگ کروا رہے ہیں، جس کے بعد اب اس بچے کا وزن 191 کلو گرام رہ گیا ہے۔ لیکن ابھی بھی یہ بچہ ایک دن میں تقریبا 5 کلو چاول اکیلا ہی کھا جاتا ہے۔

اس بچے کی بھوک نے ماں۔ باپ کو بنا دیا بھکاری

آئرا اپنے بڑھتے وزن کی وجہ سے اپنا بھی کوئی کام خود سے نہیں کر سکتا ہے۔

جب اس بچے کے والد سے بات کی گئی تو انہوں نے بتایا کہ یہ بچہ صرف ایک دن میں 5 سے زائد افراد کا کھانا اکیلا ہی کھا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھوک لگنے پرآئرا بلند آواز سے چلانا شروع کردیتا ہے، جس کی وجہ سے مجبورا اسے کچھ نہ کچھ کھانے کے لئے دینا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس بچے کے لئے کپڑے بھی ملنا اب کافی مشکل ہو گیا ہے۔ اس کی وجہ سے وہ صرف ایک کپڑا باندھ کر رہتا ہے۔

آئرا اپنے بڑھتے وزن کی وجہ سے اپنا بھی کوئی کام خود سے نہیں کر سکتا ہے۔ ہر کام کے لئے اسے سہارے کی ضرورت پڑتی ہے۔ اس کے کھانے کی عادت کی وجہ سے اس کے ماں۔ باپ قرض میں ڈوب چکے ہیں۔ ان کی آمدنی اتنی زیادہ نہیں ہے کہ وہ اس کی مانگ کو پورا کر سکیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز