افریقہ کا سب سے نوجوان اربپتی اور 10 ہزار کروڑ کا مالک محمد دیوجی، ہوٹل سے اغوا

دارالسلام کے 43 سالہ محمد دیوجی کو اس وقت اغوا کیا گیا جب وہ ایک ہوٹل کے جم میں داخل ہو رہے تھے۔

Oct 12, 2018 08:26 AM IST | Updated on: Oct 12, 2018 08:41 AM IST

افریقہ کے سب سے اربپتی شخص کو جمعرات کے روز نامعلوم بندوق برداروں نے اغوا کر لیا۔ تنزانیہ کی اقتصادی دارالحکومت دارالسلام کے 43 سالہ محمد دیوجی کو اس وقت اغوا کیا گیا جب وہ ایک ہوٹل کے جم میں داخل ہو رہے تھے۔ دیوجی ایم ای ایل ٹی گروپ کے سربراہ ہیں۔ جس کا کاروبار دنیا کے دس ممالک میں پھیلا ہوا ہے جہاں زراعت سے انشورنس تک، ٹرانسپورٹ، لاجسٹکس اور فود انڈسٹری میں اس کی لاجواب خدمات کا ہر کوئی معترف ہے۔

گورنر پال ماکونڈا نے صحافیوں کو بتایا کہ، ’ ابتدائی معلومات سے پتہ چلا ہے کہ انہیں دو گاڑیوں میں آئے گورے نوجوانوں نے اغوا کیا۔ اس طرح کا واقعہ یہاں پہلی مرتبہ ہوا ہے‘۔ دار السلام پولیس چیف لاجارو مامبوسا نے بھی اس وقعہ میں غیر ملکی افراد کے شامل ہونے کا شک ظاہر کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ دیوجی کو کار میں ڈالنے سے پہلے ہوا میں گولی چلائی گئی۔ پولیس مشتبہ افراد کی تلاش کر رہی ہے اور کچھ کو گرفتار بھی کیا گیا ہے۔

افریقہ کا سب سے نوجوان اربپتی اور 10 ہزار کروڑ کا مالک محمد دیوجی، ہوٹل سے اغوا

محمد دیوجی

Loading...

واضح ہو کہ دیوجی کی پیدائش تنزانیہ میں ہوئی اور وہ امریکہ کی جارج ٹاون یونیورسٹی سے پڑھے ہوئے ہیں۔ سال 2005 سے 2015 تک وہ رکن پارلیمنٹ بھی رہے۔ سال 2013 میں انہیں فوربس کے کور پر بھی جگہ ملی تھی اور یہ رطبہ حاصل کرنے والے وہ پہلے تنزانیائی تھے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز