الجزیرہ کا یروشلم میں اپنے بیورو دفتر کو بند کئے جانے پر اسرائیل کے خلاف قانونی کارروائی کا انتباہ

Aug 07, 2017 02:36 PM IST | Updated on: Aug 07, 2017 02:36 PM IST

یروشلم۔ قطر میں واقع الجزیرہ ٹی وی چینل نے یروشلم میں اپنے بیورو دفتر بند کئے جانے کے اسرائیلی فیصلہ کی مذمت کرتے ہوئے اسے غیر جمہوری فیصلہ قرار دیا ہے۔ چینل نے اسرائیل کے اس اقدام کو غیر جمہوری بتایا ہے اور اس کے خلاف قانونی کارروائی کرنے کا انتباہ دیا ہے۔ بتا دیں کہ اس سے پہلے جون میں سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر نے قطر کے الجزیرہ نیوز چینل کے مقامی دفاتر بند کروا دئیے تھے۔ قطر کے ذریعہ دہشت گردوں کی مبینہ حمایت کے معاملہ میں سعودی عرب سمیت اس کے ان چار حلیف ملکوں نے قطر کے ساتھ جاری اپنے تنازعہ کے بعد یہ قدم اٹھایا تھا۔

خیال رہے کہ گزشتہ اتوار کے روز اسرائیل نے قطر واقع الجزیرہ ٹی وی چینل پر دہشت گردی کی حمایت کرنے کا الزام لگاتے ہوئے يروشلم میں اس کے بیورو آفس کو بند کرنے اور اس کے صحافیوں کی منظوری منسوخ کرنے کی بات کہی تھی۔ اسرائیل کے وزیر مواصلات ایوب قرا نے ٹی وی چینل پر دہشت گردی کی حمایت کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا تھا کہ کیبل ٹی وی چینل براڈکاسٹر الجزیرہ کے عربی اور انگریزی چینلز کی نشریات بند کرنے کی تجویز پر اتفاق ہوا ہے۔ وزیر مواصلات نے کہا کہ چینل کے دفتر کو بند کرنے کے لئے آگے کی ضروری قانونی کارروائی کی جائے گی۔

الجزیرہ کا یروشلم میں اپنے بیورو دفتر کو بند کئے جانے پر اسرائیل کے خلاف قانونی کارروائی کا انتباہ

ایک خاتون یروشلم میں قطر کے الجزیرہ نیٹ ورک کے دفتر میں: علامتی تصویر، رائٹرز

وہیں، الجزیرہ چینل نے اسرائیل کے اس قدم کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ قدم ایک ایسے ملک کی طرف سے اٹھایا گیا ہے جو مشرق وسطیٰ میں خود کو واحد جمہوری ملک ہونے کا دعویٰ کرتا ہے۔ چینل نے کہا کہ وہ اس اقدام کے خلاف قانونی کارروائی کرے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز