ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کی امریکی صدر کی شدید تنقید ، کہا : ٹرمپ کے زہریلے بیانات نے دنیا کو تاریک کر دیا

ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنی سیاسی انتخابی مہم کے دوران جو زہریلے بیانات دئے، وہ دنیا کو پہلے سے زیادہ تاریک بنا دینے کے ساتھ ساتھ عالمی سطح پر تقسیم پسندی کی سیاست کے رجحان میں اضافے کا سبب بھی بنے

Feb 22, 2017 08:21 PM IST | Updated on: Feb 22, 2017 08:21 PM IST

پیرس : انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ایمنسٹی کا کہنا ہے کہ امریکی صدر ٹرمپ کے زہریلے بیانات نے دنیا کو تاریک تر کر دیا ہے۔ ایمنسٹی کے مطابق ٹرمپ کے اس رویے سے عالمی سیاست میں تقسیم پسندانہ رجحانات میں واضح اضافہ ہوا ہے۔نیوز ایجنسی روئٹرز کی رپورٹوں کے مطابق فرانسیسی دارالحکومت پیرس میں انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کہا کہ گزشتہ برس نومبر میں ہونے والے امریکی صدارتی الیکشن سے قبل ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنی سیاسی انتخابی مہم کے دوران جو زہریلے بیانات دئے، وہ دنیا کو پہلے سے زیادہ تاریک بنا دینے کے ساتھ ساتھ عالمی سطح پر تقسیم پسندی کی سیاست کے رجحان میں اضافے کا سبب بھی بنے۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل نے دنیا کے 159 ممالک کی صورت حال کا احاطہ کرنے والی اپنی تازہ ترین سالانہ رپورٹ میں کہا ہے کہ گزشتہ برس انسانی وقار اور مساوات کے اصولوں کو ایسے سیاستدانوں کی طرف سے شدید حملوں کا سامنا رہا، جو ایسا کرتے ہوئے اپنی انتخابی کامیابیوں کو یقینی بنانا چاہتے تھے۔ایمنسٹی نے اپنی اس رپورٹ میں ڈونالڈ ٹرمپ کی جذباتی اور اشتعال انگیز بیان بازی کو خاص طور پر اپنا موضوع بنایا ہے، جو اس سال بیس جنوری سے چار سال کے لیے امریکی صدر کا عہدہ بھی سنبھال چکے ہیں۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کی امریکی صدر کی شدید تنقید ، کہا : ٹرمپ کے زہریلے بیانات نے دنیا کو تاریک کر دیا

گیٹی امیجیز

بیان کے مطابق ٹرمپ کے انہی زہریلے بیانات کے نتیجے میں دنیا آج پہلے کی نسبت زیادہ تاریک اور غیر مستحکم ہو چکی ہے۔‘‘ اس کی مثال پورے یورپ اور امریکا میں تارکین وطن اور مہاجرین کو نشانہ بنا کر دیے جانے والے وہ نفرت انگیز بیانات بھی ہیں، جو گزشتہ برس کے مقابلے میں آج واضح طور پر زیادہ ہو چکے ہیں۔ایمنسٹی نے اپنے اس بیان میں مزید کہا ہے، ’’(ٹرمپ کی طرف سے ملنے والے) ابتدائی اشارے یہی بتاتے ہیں کہ امریکا کی آئندہ خارجہ پالیسی کثیر الفریقی تعاون کو پس پشت ڈالتے ہوئے ایک ایسے نئے دور کے آغاز کا سبب بنے گی، جس میں عدم استحکام اور بھی زیادہ ہو گا اور مختلف ممالک ایک دوسرے کو شکوک و شبہات کی نظروں سے دیکھا کریں گے۔‘‘

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز