23 prisioners released from saharanpur jail by jamiat ulema e hind efforts– News18 Urdu

جمعیۃعلماء ہند کی کوششوں سے 23 قیدی رہا، جیل سپرنٹنڈنٹ نےکی مولانا ارشد مدنی کی ستائش

غربت اورمعاشی حالات کمزورہونے کی وجہ سے عدالت کی جانب سےعائد کردہ جرمانہ کی رقم ادا نہ کرپانے کے سبب یہ قیدی اضافی سزا کاٹ رہے تھے، ان میں اکثریت غیرمسلموں قیدیوں کی ہے۔

Jan 16, 2019 02:24 PM IST | Updated on: Jan 16, 2019 02:24 PM IST

جمعیۃ علماء ہند کی جانب سے بلاتفریق مذہب و مسلک  کی جانے والےعظیم کارنامےاورخدمت خلق کی ایک خوشنما سنگم ضلع جیل سہارنپورمیں آج اس وقت دیکھنےکوملاجب جمیعۃعلماء ہند کےایک وفد نے حضرت مولانا سید ارشد مدنی کے حکم سے ضلع جیل کے اعلی حکام سے ملاقات کی اورجیل میں سزا کاٹ رہے 23 ایسے قیدیوں کی رہائی کا راستہ صاف کردیا کہ جنہوں نےعدالت سے اپنے جرائم کی ملنے والی سزا کی مدت تومکمل کرلی تھی۔

اطلاعات کے مطابق سہارنپورضلع جیل میں غربت اورمعاشی حالات کمزورہونے کی وجہ سے عدالت کی جانب سےعائد کردہ جرمانہ کی رقم کا انتظام نہیں کرپا رہے تھے اورصرف اپنی غربت اورمالی حالت کمزورہونے کی وجہ سے اضافی سزا کاٹ رہے تھے۔ اس دوران جیل سپرنٹنڈنٹ وریش راج شرما نے جیل میں موجود ایسے 23 قیدیوں کی فہرست ان کے جرمانہ کی تفصیلات کے ساتھ جمعیۃ علماء ضلع سہارنپورکے صدرمولانا حبیب اللہ مدنی اوراسد اللہ اجمیری گنگوہ سابق وزیراترپردیش حکومت کے سپرد کی اورجرمانہ کی ادائیگی کے لئے قانونی کاروائی میں پیش رفت کی۔

جمعیۃعلماء ہند کی کوششوں سے 23 قیدی رہا، جیل سپرنٹنڈنٹ نےکی مولانا ارشد مدنی کی ستائش

مولانا سید ارشد مدنی: فائل فوٹو

Loading...

قابل ذکر ہے کہ جمعیۃ علماء ہند کی کوشش سے رہا ہونے والے قیدیوں میں غیرمسلم قیدیوں کی اکثریت ہےاورجب ان کو اس بات کی خبردی گئی کہ ان پرعائد کردہ جرمانہ کی رقم جمعیۃعلماء ہند نے ادا کردی ہے اوروہ تمام افراد آج سلاخوں کی اس گھٹن بھری زندگی سے آزاد ہوکراپنےاہل وعیال میں پرسکون زندگی گزارسکیں گےتواس لمحہ ان کے چہروں پرآزادی کی خوشی قابل دید تھی۔

اس موقع پرسبھی قیدی آئندہ کوئی جرم کرنے سے توبہ کرتے نظرآئے۔ آزادی کی خوشی میں کچھ قیدیوں کی آنکھوں میں آنسوؤں کی جھلک بھی محسوس کی گئی۔ قید سے آزاد ہونے والے قیدیوں میں سوبھی، سندیپ، گڈو، پپو، سرفراز، مہردین، ساغرپال، اکرام، امت، منا، افضال، دلشاد، راجبیر، منٹو، رنکواورراشد وغیرہ کے نام شامل ہیں۔

سہارنپورجیل سے رہا کئے گئے قیدیوں کے ساتھ جمعیۃ علما ہند کےعہدیداران اورجیل سپرنٹنڈنٹ

اس موقع پرجیل سپرنٹینڈنٹ وریش راج شرما نے مولانا سید ارشد مدنی صدرجمعیۃ علماء ہند کا اپنےالفاظ میں شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ مولانا ارشد مدنی نےہرسال کی طرح اس سال بھی سہارنپور ضلع جیل کے قیدیوں کے لئے دوبہت بڑے کام انجام دیئے ہیں، ایک تو سبھی قیدیوں میں گذستہ ہفتہ کمبل تقسیم کرائے اور دوسرا 23  قیدیوں کے جرمانہ کی رقم تقریباً دولالھ چوتیس ہزارروپئے کی ادائیگی کرائی، جس کی وجہ سے23 قیدیوں کوآج یا کل میں قانونی کارروائی مکمل کرنے کے بعد رہا کر دیا جائے گا۔ جیل سپرنٹینڈنٹ نے مولانا مدنی کی ان خدمات کی ستائش کی اور مستقبل کے لئے اپنی خدمات سہارنپورجیل کے اندرجاری رکھنے کی اپیل بھی کی۔

سہارنپورجیل سے رہا کئے گئے قیدیوں کے ساتھ جمعیۃ علما ہند کےعہدیداران ودیگر

واضح رہے کہ گذشتہ ہفتہ مولانا ارشد مدنی نے یہاں موجود کمزورقیدیوں کے درمیان تقریبا 600کمبل تقسیم کرائے تھے۔ جمعیۃ علماء ہند کی جانب سے قیدیوں کے جرمانہ کی رقم جمع کرانے کے لئے ضلع جیل پہنچے جمعیۃعلماء ضلع سہارنپورکے رہا صدرمولانا حبیب اللہ مدنی سے جب رہا ہونے والے قیدیوں کے مذہب ومسلک کے تعلق سے سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ جمعیۃ ہمیشہ سے انسانی ہمدردی کے جذبہ اورنظریہ سے اپنی خدمات انجام دیتی چلی آرہی ہے ملک کا باشندہ خواہ ہندو ہو مسلم ہوسکھ ہویا کسی اورمذہب سے تعلق رکھنے والا ہو یہ تنظیم صرف اورصرف انسانی ہمدردی کی بنیاد پراس کی مدد کرتی ہے اورآئندہ بھی اپنے اس موقف پرچلتی رہے گی۔

Loading...