وراٹ کوہلی نے کہی بڑی بات: ٹیم کے ڈریسنگ روم میں اب نہیں ہے کسی کو ڈانٹنے والا ماحول

ٹیم انڈیا کےکپتان وراٹ کوہلی نے کہا ڈریسنگ روم کا ماحول ان دنوں بہت دوستانہ ہے۔ نوجوان کھلاڑی آرام سے اپنی بات رکھ سکتے ہیں۔ وہاں اب ڈانٹنے والا ماحول نہیں ہے۔

Jul 24, 2019 01:51 PM IST | Updated on: Jul 24, 2019 03:03 PM IST
وراٹ کوہلی نے کہی بڑی بات: ٹیم کے ڈریسنگ روم میں اب نہیں ہے کسی کو ڈانٹنے والا ماحول

ورلڈ کپ 2019 کے سیمی فائنل سے باہر ہونے کے بعد اب ٹیم انڈیا اگلے مشن یعنی ویسٹ انڈیز دورے کی تیاریوں میں مصروف ہوگئی ہے۔ وراٹ کوہلی اور روہت شرما جیسے سینئر کھلاڑیوں کے ساتھ کافی نوجوان کھلاڑی بھی اس دورے کا حصہ ہیں۔ اس کے علاوہ پرتھوی شا، شبھمن گل اور ریشبھ پنت جیسے نوجوان کھلاڑی مستقبل کیلئے تیار ہو رہے ہیں۔

ان نوجوان کھلاڑیوں کو فارم سے بھٹکنے سے روکنے کیلئے کپتان وراٹ کوہلی بھی مدد کررہے ہیں۔ اس کا خود انکشاف کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ نوجوان کھلاڑیوں کو مطمئن محسوس کرانے کیلئے مسلسل ان سے بات کرتے ہیں۔ وراٹ کوہلی نے کہا کہ اگر آپ باصلاحیت نوجوان کھلاڑی ہیں پھرتو کئی چیزیں آپ کا دھیان بھٹکا سکتی ہیں۔

دوستانہ ہے ڈریسنگ روم کا ماحول

ٹیم انڈیا کےکپتان وراٹ کوہلی نے ٹائمس آف انڈیا کو دئے انٹرویو میں کہا کہ میں نے بھی اپنے کریئر کے شروعاتی دنوں میں کئی غلطیاں کی تھیں۔ انہوں نے ساتھ ہی کہا کہ ڈریسنگ روم کا ماحول ان دنوں بہت دوستانہ ہے۔ نوجوان کھلاڑی آرام سے اپنی بات رکھتے ہیں۔ کوہلی کے مطابق 'ڈانٹنے والا ماحول اب تو ڈریسنگ روم میں ہے ہی نہیں۔ میں جتنا دوستانہ کلدیپ یادو کے ساتھ ہوں اتنا ہی ایم ایس کے ساتھ بھی ہوں۔ ایسا ماحول ہے کہ کوئی بھی کسی سے کچھ بھی کہہ سکتا ہے۔

Loading...

Loading...