وینزویلا میں حکومت مخالف مظاہروں میں مرنے والوں کی تعداد 29تک پہنچی

Apr 27, 2017 03:45 PM IST | Updated on: Apr 27, 2017 03:45 PM IST

کراکس۔ سیاسی اور اقتصادی بحران کا سامنا کر رہے جنوبی امریکی ملک وینزویلا میں حکومت مخالف مظاہرہ کر رہے مظاہرین پر فوج نے آنسو گیس کے گولے کے علاوہ پانی کی بوچھاریں بھی کیں جس کی وجہ سے اس مہینہ سے جاری حکومت مخالف مظاہرے میں مرنے والے لوگوں کی تعداد بڑھ کر 29 ہو گئی ہے۔ دارالحکومت کراکس میں مظاہرین نے ایک پل پر پتھراؤ کیا جس پر فوج نے ان کو منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کے گولے کے علاوہ پانی کی بوچھاریں بھی کیں۔ مقامی حکام نے بتایا کہ ایک 20 سالہ مظاہرین کی گیس کا ایک کنستر لگنے سے موت ہو گئی۔ اس سے پہلے اس ماہ کے آغاز میں صدر نکولس مادرو کے مخالفین نے لوگوں سے سڑک پر اترکر احتجاج کرنے کی اپیل کی تھی۔

مسٹر مادرو کے مخالفین نے وینزویلا کے لوگوں کو سڑکوں پر اترکر احتجاج کرنے اور فوج سے مادرو کا ساتھ چھوڑنے کی بھی اپیل کی تھی۔ مسٹر مادو کے اپنی طاقت کو مضبوط کرنے کے لئے کئے گئے اقدامات کو مخالفین نے 'تختہ پلٹ' کرنے کی کوشش قرار دیا ہے۔ حکومت کے خلاف احتجاج کر رہے 20 سالہ طالب علم ریکارڈو روپیرو نے کہا کہ ہم بھوک، مجرمانہ قتل اور بدعنوانی کا شکار ہیں۔ ہم ان تمام سے نجات چاہتے ہیں۔ طالب علم نے کہا کہ جب تک یہ تبدیلی نہیں ہو جاتی ہم احتجاج کرتے رہیں گے۔

وینزویلا میں حکومت مخالف مظاہروں میں مرنے والوں کی تعداد 29تک پہنچی

فوٹو کریڈٹ: دی گارجین ڈاٹ کام

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز