محمود عباس کا امریکہ کو دوٹوک جواب ، امن منصوبہ میں یروشلم نہیں تو ہمیں کسی منصوبہ کے بارے میں نہیں جاننا– News18 Urdu

محمود عباس کا امریکہ کو دوٹوک جواب ، امن منصوبہ میں یروشلم نہیں تو ہمیں کسی منصوبہ کے بارے میں نہیں جاننا

محمود عباس نے نئی ​​حکومت کے ساتھ ملاقات کے دوران کہا’’فلسطین مشکل حالات سے گزر رہا ہے ، لیکن فلسطین کے لوگ اور ان کی قیادت مکمل طور پر ذمہ داری ادا کریں گی‘‘۔

Apr 14, 2019 09:39 AM IST | Updated on: Apr 14, 2019 09:54 AM IST

مغربی ایشیا میں قیام امن میں یروشلم کو شامل نہ کرنے پر فلسطین کے صدر محمود عباس نے امریکہ پر نشانہ سادھاہے۔یہ اطلاع مقامی میڈیا نے دی۔ محمود عباس نے نئی ​​حکومت کے ساتھ ملاقات کے دوران کہا’’فلسطین مشکل حالات سے گزر رہا ہے ، لیکن فلسطین کے لوگ اور ان کی قیادت مکمل طور پر ذمہ داری ادا کریں گی‘‘۔

انہوں نے مقامی میڈیا کو بتایا’’نئی فلسطینی حکومت کے وزرا نے یروشلم کو امن منصوبہ میں شامل نہ کرنے پر اس منصوبہ کو منسوخ کر دیا ہے۔ اگر یروشلم منصوبہ میں شامل نہیں ہے تو ہمیں آئندہ کی منصوبہ کے بارے میں بھی نہیں جاننا ہے‘‘۔

محمود عباس کا امریکہ کو دوٹوک جواب ، امن منصوبہ میں یروشلم نہیں تو ہمیں کسی منصوبہ کے بارے میں نہیں جاننا

محمود عباس کی فائل فوٹو ۔

قابل غور ہے کہ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے سال 2017 کے آخر میں یروشلم کو اسرائیل کادارالحکومت قرار دیا تھا اور امریکہ کے سفارت خانے کو بھی سال 2018 میں تل ابیب سے یروشلم منتقل کر دیا تھا۔ جس کے بعد سے امریکہ اور فلسطین کے تعلقات میں دڑاڑ آگئی ہے۔

Loading...

Loading...