دوہری شہریت کے معاملہ پر ایک اور آسٹریلیائی ممبر پارلیمنٹ کا استعفی ، مخلوط حکومت پر خطرات کے بادل

آسٹریلیا میں شہریت کے معاملہ پر آج ایک اور ممبر پارلیمنٹ کے استعفی دینے سے وزیر اعظم میلكم ٹرنبل کی قیادت والی مخلوط حکومت پر خطرات کے بادل منڈلانے لگے ہیں

Nov 11, 2017 10:12 AM IST | Updated on: Nov 11, 2017 10:12 AM IST

سڈنی : آسٹریلیا میں شہریت کے معاملہ پر آج ایک اور ممبر پارلیمنٹ کے استعفی دینے سے وزیر اعظم میلكم ٹرنبل کی قیادت والی مخلوط حکومت پر خطرات کے بادل منڈلانے لگے ہیں کیونہ کہ مخلوط حکومت کواقلیت میں آجانے کاخطرہ بڑھ گیا۔ آسٹریلیا کے آئین کے مطابق دوہری شہریت رکھنے والے افراد پارلیمنٹ کی رکنیت نہیں حاصل کر سکتے۔ اس سے پہلے گذشتہ ماہ مسٹر ٹرنبل کی مخلوط حکومت کو اس وقت ایک دھچکا لگا تھاجب ہائی کورٹ نے اپنے ایک فیصلہ میں پانچ ممبران پارلیمنٹ کو نااہل قرار دیا تھا۔

اپنے عہدہ سے استعفی دینے والے کنزرویٹو لبرل پارٹی کے ایم پی جان الیگزینڈر نے سڈنی میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ انہیں نہیں معلوم کہ اب وہ آسٹریلوی شہری ہیں یا نہیں تو وہ اپنے عہدہ سے استعفی دیتے ہیں۔ مسٹر الیگزینڈر نے کہا "یہ میرا فرض ہے کہ مجھے اپنے عہدہ سے استعفی دے دینا چاہئے اور میں ایسا ہی کروں گا‘‘۔

دوہری شہریت کے معاملہ پر ایک اور آسٹریلیائی ممبر پارلیمنٹ کا استعفی ، مخلوط حکومت پر خطرات کے بادل

کنزرویٹو لبرل پارٹی کے ایم پی جان الیگزینڈر

انہوں نے کہا کہ اس قضیہ کو صاف کرنا بہت ضروری ہے۔ غور طلب ہے کہ مسٹر الیگزینڈر اپنی برطانوی شہریت کو لے کر برطانیہ کی وزارت داخلہ کے جواب کا انتظار کر رہے تھے۔

مسٹر الیگزینڈر اگر ضمنی انتخاب لڑ کر اپنی پارلیمنٹ کی رکنیت کو برقرار رکھنا چاہتے ہیں تو انہیں یہ ثابت کرنا ہوگا کہ ان کے پاس صرف آسٹریلیا کی شہریت ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز