بنگلہ دیش حکومت کا روہنگیا مسلمانوں کو نشیبی سمندری جزیرہ بھاشن چار منتقل کرنے کا منصوبہ

بنگلہ دیش کی حکومت روہنگیا مہاجرین کو ایک نشیبی سمندری جزیرے بھاشن چار پر منتقل کرنے کے حکومتی پروگرام پر کاربند ہے۔

Nov 30, 2017 11:32 PM IST | Updated on: Nov 30, 2017 11:34 PM IST

ڈھاکہ : بنگلہ دیش کی حکومت روہنگیا مہاجرین کو ایک نشیبی سمندری جزیرے بھاشن چار پر منتقل کرنے کے حکومتی پروگرام پر کاربند ہے۔ اس جزیرے کی ترقی کے لیے حکومت نے رواں ہفتے کے دوران 280 ملین ڈالر کی منظوری بھی دی ہے۔ بھاشن چار جزیرے کو مانسون کی بارشوں کے دوران سیلابی صورت حال کا سامنا رہتا ہے، جس کی وجہ سے انسانی حقوق کے گروپوں نے حکومت کے اس منصوبے پر شدید نکتہ چینی کرتے ہوئے اس پر نظرثانی کا مطالبہ کیا ہے۔ خلیج بنگال میں گیارہ برس قبل سمندری سطح کے نیچے ہونے پر یہ جزیرہ نمودار ہوا تھا۔

خیال رہے کہ روہنگیا مسلمانوں پر میانمار (برما) میں کئی دہائیوں سے ظلم جاری ہے۔ وہ برما کی ریاست راکھین میں آباد ہیں تاہم برما میں آباد بدھ مت کے ماننے والے انہیں برما کا شہری تسلیم کرنے پر تیار نہیں، میانمار فوج نے 25 اگست سے بڑے پیمانے پر آپریشن کرتے ہوئے ہزاروں روہنگیا مسلمانوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا ہے جب کہ 6 لاکھ سے زائد مسلمان بے گھر ہوکر بنگلہ دیشی سرحد کے نزدیک بنے کیمپوں میں کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔

بنگلہ دیش حکومت کا روہنگیا مسلمانوں کو نشیبی سمندری جزیرہ بھاشن چار منتقل کرنے کا منصوبہ

روہنگیا مہاجرین ۔ فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز