روہنگیا بحران سے نمٹنے کے لئے ہندوستان کی حمایت چاہتا ہے بنگلہ دیش

Sep 11, 2017 12:52 PM IST | Updated on: Sep 11, 2017 12:52 PM IST

ڈھاکہ۔ پناہ گزینوں کی واپسی کے معاملے پر میانمار پر دباو بڑھاتے ہوئے بنگلہ دیش نے روہنگیا کے مسئلے سے نمٹنے کے لئے ہندوستان سے مدد طلب کی ہے۔ اقوام متحدہ کے مطابق، میانمار کے شمالی رخائن صوبے میں پولیس چوکیوں پر حملے کے بعد تشدد بھڑکنے پر 25 اگست کے بعد سے تقریباً تین لاکھ روہنگیا مسلمان صوبہ چھوڑ کر بنگلہ دیش چلے گئے۔

روہنگیا مسلمانوں کا الزام ہے کہ فوج اور رخائن کے بودھوں نے ان کے خلاف ایک ظالمانہ مہم شروع کی ہے۔ اگرچہ میانمار نے ان الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کی فوج روہنگیا کے دہشت گردوں کے خلاف لڑ رہی ہے۔

روہنگیا بحران سے نمٹنے کے لئے ہندوستان کی حمایت چاہتا ہے بنگلہ دیش

حکمراں پارٹی عوامی لیگ کے سیکریٹری جنرل اور بنگلہ دیش کے سینئر وزیر عبیداللہ قادر نے کہا کہ، "پوری دنیا آج روہنگیا مسئلہ کے بارے میں تشویش میں ہے اور ہندوستان نے بھی اپنی تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اس وقت ہندوستان کی تشویش اور رویہ ہمارے ساتھ ہے۔ قادر نے بنگلہ دیش کی 1971 ء کی جنگ آزادی کے دوران ہندوستان کی فیصلہ کن حمایت کا ذکر کیا اور کہا کہ "ہم امید رکھتے ہیں کہ ہندوستان اس انسانی بحران کے دوران بھی بنگلہ دیشی کی حمایت کرے گا۔

خیال رہے کہ روہنگیا مسلمانوں کی بڑی تعداد میانمار سے بنگلہ دیش میں آ رہی ہے۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز