لندن بم دھماکوں میں ملوث ایک نوجوان پولیس کی حراست میں

Sep 16, 2017 09:17 PM IST | Updated on: Sep 16, 2017 09:17 PM IST

لندن۔  برطانوی پولیس نے لندن ٹرین دھماکہ میں ملوث افراد کی تلاشی مہم میں ایک بڑی کامیابی حاصل کرتے ہوئے ایک 18 سالہ نوجوان کو گرفتار کیا ہے۔ اس دھماکہ میں 30 افراد زخمی ہوگئے تھے۔ وزیر اعظم تھریسامے نے اس دھماکہ کے پیش نظر برطانیہ کو سیکورٹی کے اعتبار سے مخدوش ترین درجہ میں رکھا ہے جس کا مطلب یہ ہے کہ مزید حملے ہوسکتے ہیں اور اہم مقامات کے تحفظ کے لئے مسلح پولیس اور فوجی تعینات کئے جائیں گے۔ جمعہ کی صبح کو مغربی لندن میں کھچاکھچ بھری ٹرین میں ایک دیسی بم کے جزوی طور پر پھٹنے سے تقریباً 30 افراد زخمی ہوگئے تھے۔

پولیس کے انسداددہشت گردی دستہ کے کوآرڈینٹر نیلو بسونے بتایا کہ آج صبح ہمیں اپنی چھان بین میں ایک بڑی کامیابی ملی ہے اور ہم نے ایک شخص کو گرفتار کیا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ چھان بین کی پیش رفت سے ہم خوش ہیں مگر سیکورٹی کی سنگین صورتحال کے پیش نظر سخت ترین حفاظتی انتظامات برقرار رہیں گے۔ یہ گرفتاری ڈوور کے بندرگاہی علاقہ میں عمل میں آئی جہاں سے لوگ فیری کے ذریعہ فرانس جاتے ہیں۔

لندن بم دھماکوں میں ملوث ایک نوجوان پولیس کی حراست میں

رائٹرز

اس دوران برطانیہ نے اہم مقامات مثلاً نیوکلیائی پلانٹوں اور وزارت دفاع کے ٹھکانوں پر سیکڑوں فوجی تعینات کردیئے ہیں جس سے کہ مسلح پولیس بم دھماکوں میں ملوث افراد کو ڈھونڈنے میں اپنی خدمات پیش کرسکے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز