برکینا فاسو کے ہوٹل اور ریستوران پر حملہ، تمام حملہ آور ہلاک

Aug 14, 2017 10:31 AM IST | Updated on: Aug 14, 2017 03:37 PM IST

اوگا دوگو۔ برکینا فاسو کی راجدھانی اوگادوگو میں سیکورٹی فورسیز نے کل رات ایک ہوٹل اور ایک ریستوراں پر حملہ کرنے والے تین مشتبہ دہشت گردوں کو مار گرایا ہے۔ ان حملوں میں جس میں کم از کم 17 افراد ہلاک اور آٹھ دیگر زخمی ہوگئے۔ وزیر اطلاعات ریمی ڈینڈ جینو نے آج سرکاری ٹیلی ویژن کو بتایا کہ تمام تین حملہ آور مارے گئے ہیں لیکن بڑی تعداد میں لوگ اب بھی عمارت کے اندر پھنسے ہوئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ بندوق برداروں نے ’ہوٹل براویا‘ اور ’عزیز استنبول ریستراں‘ پر حملہ کردیا جس میں 17 افراد ہلاک اور آٹھ دیگر زخمی ہوئے۔ انہوں نے بتایا کہ حملے سے نمٹنے کیلئے سیکورٹی فورسیز کو علاقے میں تعینات کردیا گیا تھا۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ تین بندوق برداروں نے پرہجوم ’کوامے کروماہ ایونیو‘ پر واقع ان ریستراں میں رات نو بجے کے کچھ ہی دیر بعد حملہ کردیا۔ انہوں نے بتایا کہ بندوق برداروں نے ہوٹل اور ریستراں کے باہر بیٹھے لوگوں پر اچانک فائرنگ شروع کردی۔ اچانک ہوئے حملے سے لوگوں میں افراتفری مچ گئی اور چاروں جانب لاشیں اور خون نظر آنے لگا۔

برکینا فاسو کے ہوٹل اور ریستوران پر حملہ، تمام حملہ آور ہلاک

تصویر: رائٹرز

شہر کے ایک اسپتال کے ذرائع نے بتایا کہ ہلاک شدگان میں ترکی کا ایک شہری بھی شامل ہے۔ فوج نے شہر کے مرکز کی ناکہ بندی کردی ہے اور امریکی سفارتخانہ نے اپنے شہریوں کو حملے والے علاقہ میں نہ جانے کی وارننگ دی ہے۔ شبہ ظاہر کیا جا رہا ہے یہ حملہ دہشت گرد تنظیم القاعدہ سے وابستہ تنظیم نے کیا ہے۔ واضح رہے کہ جنوری 2016 میں اسی بازار میں اسپلینڈڈ ہوٹل اور کوپوچینو ریستراں پر ہوئے دہشت گردانہ حملے میں 30 لوگوں کی موت ہوگئی تھی۔ اس دوران 170 سے زیادہ لوگوں کو یرغمال بنا لیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز