مختلف سماجی تنظیموں نے انجمن اسلامیہ انتخابات میں دھاندلی کے الزام کو لیکر آواز بلند کی

Oct 31, 2017 08:40 PM IST | Updated on: Oct 31, 2017 08:40 PM IST

 رانچی۔ رانچی کی مختلف سماجی تنظیمیں انجمن اسلامیہ انتخابات میں فرضی واڑا کرنے کے الزام کو لیکر آوازیں بلند کررہی ہیں، وہیں انتخابی کنوینرنے اسکی تردید کی ہے تاہم ریاستی وقف بورڈ  کے ذریعہ غیرجانب دارانہ انتخابات کے مقصد سے ایک آبزرور کی بحالی کی گئی ہے۔  انجمن اسلامیہ کی  16رکنی نئی کمیٹی کے لئے پانچ نومبر کو ووٹ ڈالے جائیں گے۔ ساتھ ہی دیرشام تک نتائج کا اعلان کیا جانا ہے۔ اس کے لئے مولانا آزاد کالج میں پولینگ بوتھ بنایا جائے گا ۔ پرامن اور غیرجانب دارانہ انتخابات کے مقصد سے ریاستی سنی وقف بورڈ نے ایڈوکیٹ شعیب رضا کو آبزرور کے طور پر بحال کیا ہے۔

واضح رہے کہ اس انتخاب میں تقریبآ چوبیس سو ووٹر اپنے حق رائے دہی کا استعمال کریں گے۔ اس انتخاب میں فرضی واڑا کرنے کے الزامات کو لیکر شہر کی مختلف سماجی تنظیمیں مسلسل آوازیں بلند کر رہی ہیں جبکہ انتخابی کنوینر حسیب اختر نے ان الزامات کی سخت الفاظ میں تردید کی ہے۔ عظیم مجاہد آزادی مولانا ابوالکلام آزاد کے ذریعہ قائم کردہ انجمن اسلامیہ کی نئی کمیٹی کے لئے ہونے والے انتخابات آپسی رسہ کشی کی وجہ سے تقریبآ ایک سال سے ٹالے جاتے رہے ہیں۔

مختلف سماجی تنظیموں نے انجمن اسلامیہ انتخابات میں دھاندلی  کے الزام کو لیکر آواز بلند کی

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز