مغربی بنگال کی لڑکی کی جمشید پور میں اجتماعی آبروریزی ، عاشق نے مار پیٹ کرکے ندی کے کنارے پھینکا

جمشید پور میں عاشق نے اپنے دوستوں کے ساتھ مل کر معشوقہ کی اجتماعی آبروریزی کی ۔ اجتماعی آبروریزی کے بعد ملزموں نے معشوقہ کے ساتھ بری طرح مار پیٹ بھی کی اور اس کو ندی کے کنارے پھینک کر فرار ہوگئے ۔

Oct 04, 2018 01:50 PM IST | Updated on: Oct 04, 2018 01:50 PM IST

جمشید پور میں عاشق نے اپنے دوستوں کے ساتھ مل کر معشوقہ کی اجتماعی آبروریزی کی ۔ اجتماعی آبروریزی کے بعد ملزموں نے معشوقہ کے ساتھ بری طرح مار پیٹ بھی کی اور اس کو ندی کے کنارے پھینک کر فرار ہوگئے ۔ واقعہ کی اطلاع ملنے کے بعد جائے واقعہ پر پہنچی پولیس نے زخمی حالت میں لڑکی کو ایم جی ایس اسپتال میں داخل کرایا ، جہاں لڑکی کی حالت نازک بنی ہوئی ہے ۔ لڑکی کا چہرہ بری طرح سے زخمی ہے ۔ پولیس نے معاملہ درج کرکے ملزمین کی تلاش شروع کردی ہے ۔

اطلاعات کے مطابق متاثرہ مغربی بنگال کے ہاوڑہ کی رہنے والی ہے ۔ دو دن پہلے عاشق اس کو ہاوڑہ سے جمشید پور لے کر آیا تھا ۔ بدھ کی رات اپنے دوستوں کے ساتھ مل کر عاشق نے متاثرہ کی اجتماعی آبروریزی کی ۔ بعد میں اس کو بری طرح سے مار پیٹ کر ندی کے کنارے پھینک دیا ۔ صبح مقامی لوگوں نے واقعہ کی اطلاع پولیس کو دی ۔ مانگو پولیس معاملہ کی چھان بین میں مصروف ہوگئی ہے ۔

مغربی بنگال کی لڑکی کی جمشید پور میں اجتماعی آبروریزی ، عاشق نے مار پیٹ کرکے ندی کے کنارے پھینکا

علامتی تصویر

Loading...

مانگو تھانہ کے اے ایس آئی کا کہنا ہے کہ متاثرہ گزشتہ تین دن سے عاشق کے ساتھ تھی ۔ بدھ کی رات کو اس کی آبروریزی کی گئی ۔ مار پیٹ بھی کی گئی ۔ صبح لڑکی بے ہوشی کی حالت میں ہاتھی گوڑا مندر کے پاس ملی ، جہاں سے اس کو اسپتال پہنچایا گیا ۔ متاثرہ نے پولیس کو دئے اپنے بیان میں کہا ہے کہ تین لڑکوں نے اس واردات کو انجام دیا ۔ پولیس نے عاشق کے خلاف کیس درج کرلیا ہے ۔ فی الحال ملزم عاشق فرار ہے ۔

یہ بھی پڑھیں : فحش گانا بجانے سے روکا تو چلتی بس میں خاتون کانسٹیبل کی آبروریزی کی کوشش ، مار پیٹ کی دھمکی

 

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز