سیہور میں کانگریس کے ریاستی سکریٹری سمیت 300 افراد کے خلاف معاملہ درج

Jun 09, 2017 01:13 PM IST | Updated on: Jun 09, 2017 01:13 PM IST

سیہور: مدھیہ پردیش کے سيهور میں اندور-بھوپال قومی شاہراہ پر کسانوں کے مطالبات کو لے کر کانگریس اور کسان تنظیم کے کارکنوں کی جانب سے آشٹھا نگر بند کرنے کے ساتھ قومی شاہراہ کے بائی پاس سے گزرنے والی گاڑیوں میں توڑپھوڑکرنے، پتھراؤ کرنے، لوگوں کو دھمکانے اور سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کے الزام میں کانگریس کے ریاستی سیکرٹری سمیت تقریبًا 300 افراد کے خلاف معاملہ درج کیا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق کسان تحریک کے مدنظر بدھ کو کسان تنظیم اور کانگریس کی قیادت میں آشٹھا نگر میں زبردست مظاہرہ کیا گیا تھا۔ مظاہرین نے تقریباً پانچ گھنٹے تک بھوپال اندور روڈ پر رخنہ ڈالا اور جم کر توڑ پھوڑ کی۔اس دوران بڈواني ایڈیشنل کلکٹر سمیت دیگر دو افسران کی گاڑیوں کو بھی نشانہ بنایا گیا ۔ اس کے علاوہ وہاں سے گزرنے والی دیگر گاڑیوں میں توڑ پھوڑ کی گئی۔

سیہور میں کانگریس کے ریاستی سکریٹری سمیت 300 افراد کے خلاف معاملہ درج

اس معاملے میں پولیس نے کل اندور-بھوپال قومی شاہراہ پر چكاجام کرنے ، توڑ پھوڑ کرنے اور سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کے معاملے میں کانگریس کے ریاستی سیکرٹری ہرپال سنگھ ٹھاکر، سٹی کانگریس صدر زاہد گڈو سمیت تقریباً 300 لوگوں پر آشٹھانگر پولیس نے مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز