گورکھپور کے بعد اب چھتیس گڑھ کے اسپتال میں آکسیجن کی سپلائی رکنے سے تین بچوں کی موت

Aug 21, 2017 01:09 PM IST | Updated on: Aug 21, 2017 01:09 PM IST

رائے پور۔ چھتیس گڑھ کے دارالحکومت رائے پور واقع امبیڈکر اسپتال میں آکسیجن کی سپلائی رکنے سے تین بچوں کی موت ہو گئی ہے۔ واقعہ اتوار کی رات کا بتایا جا رہا ہے۔ الزام ہے کہ آپریٹر روی چندرا اپنی ڈیوٹی کے دوران شراب پی کر سو گیا تھا۔ اس کی وجہ سے اسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں آکسیجن کی سپلائی بند ہو گئی ۔ اس دوران وینٹیلیٹر پر رکھے گئے بچوں میں سے 3 کی آکسیجن نہ ملنے کی وجہ سے موت ہوگئی۔

اسپتال میں تقریبا آٹھ گھنٹے تک آکسیجن کی سپلائی رکی رہی۔ تقریبا ایسی ہی صورت حال نرسنگ وارڈ میں بھی پائی گئی۔ دیر رات تین سی ایم او اسپتال پہنچے تو نرسنگ وارڈ میں آکسیجن کی سپلائی بند پائی گئی۔ اس حادثے کے بعد اسپتال میں ہنگامہ مچ گیا جس کے بعد آکسیجن کی سپلائی شروع ہوئی۔ کہا جا رہا ہے کہ اگر کچھ اور وقت کے لئے آکسیجن کی سپلائی رکی رہتی تو اور بڑا حادثہ ہو سکتا تھا۔

گورکھپور کے بعد اب چھتیس گڑھ کے اسپتال میں آکسیجن کی سپلائی رکنے سے تین بچوں کی موت

اسپتال میں تقریبا آٹھ گھنٹے تک آکسیجن کی سپلائی رکی رہی۔

بتا دیں کہ کچھ دنوں پہلے اترپردیش کے گورکھپور کے ایک سرکاری اسپتال میں بھی آکسیجن سپلائی بند ہونے کی وجہ سے 30 سے زیادہ بچوں کی موت ہو گئی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز