مدھیہ پردیش : ہتک عزت کیس میں کانگریس لیڈر کو دوسال کی سزا، مگر 10 منٹ میں ملی ضمانت

بھوپال ضلع کی ایک عدالت نے مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان سے جڑے ہتک عزت کے معاملے میں آج کانگریس کی مدھیہ پردیش یونٹ کے چیف ترجمان کے کے مشرا کو قصوروار پاتے ہوئے دوسال کی سزاسنائی ہے۔

Nov 17, 2017 06:24 PM IST | Updated on: Nov 17, 2017 06:24 PM IST

بھوپال: بھوپال ضلع کی ایک عدالت نے مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان سے جڑے ہتک عزت کے معاملے میں آج کانگریس کی مدھیہ پردیش یونٹ کے چیف ترجمان کے کے مشرا کو قصوروار پاتے ہوئے دوسال کی سزاسنائی ہے۔ایڈیشنل ڈسٹرکٹ جج کاشی ناتھ سنگھ نے دو سال کی معمول کی سزا کے علاوہ کانگریس لیڈر پر پچیس ہزار روپئے کا جرمانہ بھی عائد کیا ہے۔

واضح رہے کہ ریاستی کانگریس کے چیف ترجمان نے تین سال قبل پریس کانفرنس میں وزیر اعلی مسٹر چوہان اور ان کے خاندان کے سلسلے میں کچھ الزامات عائدکیے تھے۔ ان کے اس الزام پر، اس وقت کے پبلک پراسیکیوٹر آنند تیواری نے کے کے مشرا کے خلاف یہاں کی عدالت میں ہتک عزت کا مقدمہ درج کرایا تھا۔

مدھیہ پردیش : ہتک عزت کیس میں کانگریس لیڈر کو دوسال کی سزا، مگر 10 منٹ میں ملی ضمانت

مسٹر تیواری نے یہ دلیل دیتے ہوئے مقدمہ درج کیا تھا کہ مسٹر چوہان ریاست کے سربراہ ہیں اور ان کے خلاف عائد کئے جانے والے الزامات سے ان کی عزت نفس مجروح ہوئی ہے۔اس معاملے میں وزیر اعلی مسٹر چوہان بھی متعدد دفعہ عدالت میں حاضر ہوئے تھے۔دریں اثنا، کانگریس لیڈرکے وکیل نے فیصلے کے بعد ضمانت کی درخواست پیش کی اور عدالت نے انہیں محض 10 منٹ میں ہی ضمانت دےدی۔ یہ خیال کیا جا رہا ہے کہ کے کے مشرا اس فیصلے کو اوپری عدالت میں چیلنج کریں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز