سابق وزرائے اعلیٰ کو بنگلہ دینے کا معاملہ : شیوراج حکومت کے خلاف سپریم کورٹ جائے گی کانگریس

مدھیہ پردیش میں سابق وزرائے اعلیٰ کو بنگلہ دیئے جانے کے معاملے پرکانگریس سپریم کورٹ میں عرضی داخل کرے گی۔

Jul 29, 2018 10:10 AM IST | Updated on: Jul 29, 2018 10:10 AM IST

مدھیہ پردیش میں سابق وزرائے اعلیٰ کو بنگلہ دیئے جانے کے معاملے میں سیاست تیز ہوتی جارہی ہے۔ اب اس معاملے میں کانگریس سپریم کورٹ میں عرضی داخل کرے گی۔ ریاستی حکومت نے ہائی کورٹ کے حکم کے بعد دوبارہ سابق وزرائے اعلیٰ کو بنگلہ مختص (الاٹ) کردیا ہے۔

دراصل مدھیہ پردیش کی شیوراج حکومت نے تین سابق وزرائے اعلیٰ کیلاش جوشی، بابولال گوراوراوما بھارتی کو پھرسے پرانے بنگلے دے دیئے گئے۔ تقسیم کے لئے نئی درخواست عمل کے تحت ان تینوں سابق وزرائے اعلیٰ کوبنگلے دیئے گئے ہیں۔ اب انہیں ان بنگلوں کی فیس بھی دینی ہوگی۔

سابق وزرائے اعلیٰ کو بنگلہ دینے کا معاملہ : شیوراج حکومت کے خلاف سپریم کورٹ جائے گی کانگریس

وہیں ریاستی حکومت نے سابق وزیراعلیٰ دگوجے سنگھ کو بنگلہ الاٹ نہیں کیا گیا ہے۔ اس معاملے میں بتایا گیا ہے کہ دگوجے سنگھ کی طرف سے بنگلے کو لے کرکوئی درخواست نہیں آئی ہے۔ حالانکہ دگوجے سنگھ نے چیف سکریٹری کو خط لکھ کر اسٹاف کے لئے دفتر کا مطالبہ کیا ہے۔ اس معاملے میں دگوجے سنگھ کے چیف سکریٹری کو لکھے خط پرابھی کوئی کارروائی نہیں ہے۔

غورطلب ہے کہ کچھ دن پہلے ہائی کورٹ کے حکم کے بعد مدھیہ پردیش میں سابق وزرائے اعلیٰ کو بنگلہ خالی کرنے کا نوٹس دیا گیا تھا، لیکن ریاستی حکومت نے وہی بنگلے کرائے پر الاٹ کرنے کا حکم جاری کردیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز