Live Results Assembly Elections 2018

مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات: ای وی ایم کی سیکورٹی کو لے کر کانگریسیوں کا ہنگامہ

ایک ویڈیو سامنے آیا ہے، جس میں کل رات اسٹرانگ روم کے باہر ایک گاڑی سے دو افراد کچھ باکس اسٹرانگ روم کے اندر لے جاتے ہوئے نظر آرہے ہیں

Dec 01, 2018 04:35 PM IST | Updated on: Dec 01, 2018 04:35 PM IST

 مدھیہ پردیش کے ستنا ضلع ہیڈکوارٹر پر اسمبلی انتخابات سے متعلق الیکٹرونک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) رکھے جانے کے محفوظ مقام اسٹرانگ روم میں مبینہ طور پرباکس لے جانے کا ویڈیو وائرل ہونے کے بعد کانگریس اور بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کے کارکنوں نے ہنگامہ کیا۔ مقامی ويكٹ نمبر ایک اسکول کے احاطے میں بنائے گئے اسٹرانگ روم کے ارد گرد کل دیر رات سے ہی کانگریس اور بی ایس پی کے لیڈر اور کارکنوں نے یکجا ہوکر حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور انتظامیہ کے خلاف گڑبڑی کے الزام عائد کئے۔ بی ایس پی امیدوار پشکر سنگھ تومر اپنے حامیوں کے ساتھ موقع پر پہنچے اور انہوں نے صورتحال کا جائزہ لینے کے ساتھ سیکورٹی حکام سے باکس کے سلسلے میں پوچھ گچھ کی۔

دراصل ایک ویڈیو سامنے آیا ہے، جس میں کل رات اسٹرانگ روم کے باہر ایک گاڑی سے دو افراد کچھ باکس اسٹرانگ روم کے اندر لے جاتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔ اگرچہ ابھی اس ویڈیو کی سچائی کی مکمل جانچ باقی ہے۔ اس ویڈیو کے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد صبح سے اسٹرانگ روم کے باہر بھیڑ جمع ہو گئی۔ اس کے بعد کانگریس اور بی ایس کے کارکن اور رہنما بھی وہاں پہنچ گئے۔اس سلسلے میں ضلع الیکشن افسر راہل جین نے میڈیا سے بات چیت میں دعوی کیا کہ کہیں کوئی خرابی نہیں ہے اور ای وی ایم سیکورٹی کے سخت پہرے میں ہیں۔

مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات: ای وی ایم کی سیکورٹی کو لے کر کانگریسیوں کا ہنگامہ

ای وی ایم کی سیکورٹی کو لے کر احتجاج کرتے کانگریسی

اس سے قبل کل راجدھانی بھوپال میں اسٹرانگ روم کے نزدیک لگے سی سی ٹی وی کیمرے کے ڈسپلے میں خرابی آنے کی وجہ سے وہ ایک گھنٹے سے زیادہ وقت تک بند رہا۔ کانگریس کارکنان کے ہنگامے کے بعد کلکٹر کو بھی جائے وقوع پر پہنچنا پڑا اور انہوں نے کہا کہ کوئی گڑبڑی نہیں ہوئی ہے ۔دیر شام ساگر ضلع ہیڈکوارٹر پر كھورئي اسمبلی حلقہ سے متعلق ای وی ایم پہنچنے پر بھی کانگریس کارکنوں نے گڑبڑی کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ مشینیں تقریباً 48 گھنٹے بعد بغیر نمبر کی گاڑیوں سے پہنچیں ۔ حالانکہ انتظامیہ نے کہا کہ یہ مشینیں اضافی تھیں اور ووٹنگ والي مشینیں اسٹرانگ روم میں محفوظ ہیں۔ اسی طرح کی خبریں كھرگون سے بھی موصول ہوئی ہیں۔

مدھیہ پردیش کی سبھی 230 اسمبلی سیٹوں کے لیے 28 نومبر کو ووٹنگ ہوئی تھی اور سبھی حلقوں میں ووٹوں کی گنتی 11 دسمبر كو ہوگی۔ اس مدت کے دوران ای وی ایم متعلقہ اضلاع میں سخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان اسٹرانگ روم میں رکھی گئی ہیں۔ اسٹرانگ روم کے گرد و نواح کی ویڈیوگرافی بھی کرائی جا رہی ہے اور مختلف جماعتوں نے نگرانی کےلئے وہاں اپنے نمائندے تعینات کئے ہوئے ہیں۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز