نوٹ بندی : پچاس دن بعد بھی حالات میں سدھارنہیں، ریئل اسٹیٹ کاروبار کو بڑا جھٹکا

Jan 08, 2017 08:47 PM IST | Updated on: Jan 08, 2017 08:47 PM IST

رانچی : ملک میں نوٹ بندی کو پچاس دنوں سے زیادہ کا عرصہ گزر گیا ہے ، لیکن بازاروں کے حالات میں اب تک سدھار نہیں ہو پایا ہے ۔ چھوٹے کاروباری ہوں یا بڑے ، سبھی نوٹ بندی سے متاثر ہوئے ہیں۔ نوٹ بندی کی وجہ سے جھارکھنڈ میں ریئل اسٹیٹ کے کاروبار کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔

بڑے نوٹوں پر پابندی اور بینکوں سے رقم نکالنے کی حد طے کئے جانے سے عام و خاص کے ساتھ ساتھ کاروباریوں کو شدید پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہاہے۔ نوٹ بندی کی وجہ سے جھارکھنڈ میں زمین و مکان کی خرید و فرخت میں نمایاں کمی آئی ہے۔ ریئل اسٹیٹ کے کاروباریوں کے مطابق نوٹ بندی کے اعلان کے بعد اس کاروبار میں 80 فیصدتک گراوٹ آگئی ہے۔

نوٹ بندی : پچاس دن بعد بھی حالات میں سدھارنہیں، ریئل اسٹیٹ کاروبار کو بڑا جھٹکا

ان کاروبارویوں کے مطابق فلیٹ میں استعمال ہونے والے مٹیریل جیسے بالو، سیمنٹ ، اسٹون چپس و دیگر اشیا کی قیمتوں میں اب تک کوئی کمی نہیں ہوئی ہے۔ ان کا کہنا ہےکہ ایک جانب جہاں ان اشیا کی خریداری کے لین دین میں مشکل ہورہی ہے وہیں ٹھیکہ داروں اور مزدوروں کی ادائیگی میں بھی کافی پریشانیاں پیش آ رہی ہیں۔

تشویشناک پہلو تو یہ ہے کہ ہارڈ کیش کے لین دین کا کاروبار ہونے کی وجہ سے لوگ فلیٹ اور زمین کی خریداری میں دلچسپی نہیں لے رہے ہیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز