کرایہ کو لے کر وقف بورڈ انتظامیہ اور کرایہ داری کمیٹی آمنے سامنے، یہاں آج بھی ایک آنہ دو آنہ ہے کرایہ

Mar 30, 2017 09:13 PM IST | Updated on: Mar 30, 2017 09:15 PM IST

بھوپال : مدھیہ پردیش وقف بورڈ اور تنازع کے بیچ چولی دامن کا ساتھ ہے ۔ ایک تنازع ختم نہیں ہوتا ہے کہ دوسرا تنازع جنم لے لیتا ہے۔ نیا تنازع وقف بورڈ انتظامیہ اور اوقاف کرایہ دار کمیٹی کے درمیان شرو ع ہوگیا ہے۔ اوقاف کرایہ دار کمیٹی کا کہنا ہے کہ وہ کرایہ میں اضافہ کیلئے تیار ہے ، لیکن اس کے لیے بورڈ کو ضابطے طے کرنے ہوں گے ۔ کرایہ دار کمیٹی ہر تین سال میں کرایہ میں اضافہ کرنے کیلئے راضی ہے ، جبکہ ان کا الزام ہے کہ بورڈ کے ذمہ داران ان سے مارکیٹ ریٹ سے کرایہ وصول کرنا چاہتے ہیں ، جو کسی طرح حق بجانب نہیں ہے۔

ادھر دوسری جانب اس سلسلہ میں جب ای ٹی وی نے مدھیہ پردیش وقف بور ڈ کے صدر شوکت محمد خان سے بات چیت کی ، تو انہوں نے کہا کہ بورڈ کے سابقہ چیئرمینوں کے ذریعہ جس طرح سے اقربا پروری کو فروغ دیا گیا تھا ، اسی کا نتیجہ ہے کہ بورڈ کی آمدنی متاثر ہو رہی ہے اور لوگوں نے کئی کئی دہائیوں سے بورڈ کے کرایہ داری میں کوئی اضافہ نہیں کیا ہے۔

کرایہ کو لے کر وقف بورڈ انتظامیہ اور کرایہ داری کمیٹی آمنے سامنے، یہاں آج بھی ایک آنہ دو آنہ ہے کرایہ

بورڈ چیئر مین کا یہ بھی کہنا ہے کہ مہنگائی کے اس زمانے میں آج بھی لوگ بڑی بڑی زمینوں پر قابض ہیں اور اس کا کرایہ ایک آنہ دو آنہ ادا کرتےہیں ، جس کا اثر بورڈ کی آمدنی پر پڑتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز