ہینڈلوم صنعت کے تئیں حکومت کے غیرسنجیدہ رویہ پر تشویش کا اظہار ، پیشہ سے وابستہ افراد میں مایوسی

May 20, 2017 08:16 PM IST | Updated on: May 20, 2017 08:17 PM IST

رانچی(نوشاد عالم ) مومنٹم جھارکھنڈ کے تحت ریاست میں مختلف طرح کے صنعت کو فروغ دینے کی کوشش کی جارہی ہے ، لیکن ہینڈلوم صنعت کے تئیں حکومت غیرسنجیدہ رویہ اپنائے ہوئے ہے ، جس وجہ کر اس پیشہ سے جڑے لوگوں میں مایوسی ہے۔جھارکھنڈ کے وزیر اعلی رگھوورداس ریاست میں بڑی بڑی کمپنیوں کو مدعو کرکے سرمایہ کاری کرانے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔ پچھلے دنوں مومنٹم جھارکھنڈ کے تحت 21 نئے پروجیکٹ کا سنگ بنیاد رکھا گیا اور تین پروجیکٹ کا افتتاح کیا گیا ۔

وہیں بنکر کے سرکردہ لیڈر امانت علی انصاری کا کہنا ہے کہ حکومت بنکروں اور ہینڈ لوم صنعت کے فروغ دینے کے لئے کوئی قدم نہیں اٹھا رہی ہے۔امانت علی انصاری کا کہنا ہے کہ ریاستی حکومت کے غیرسنجیدہ رویہ کی وجہ کر ہینڈ لوم صنعت کی حالت بالکل خستہ ہوچکی ہے ، جس وجہ کر بیشتر لوگ اس پیشہ کو خیرباد کرچکے ہیں۔

ہینڈلوم صنعت کے تئیں حکومت کے غیرسنجیدہ رویہ پر تشویش کا اظہار ، پیشہ سے وابستہ افراد میں مایوسی

ادھر تعلیم یافتہ نوجوانوں کا الزام ہے کہ ریاست کی تشکیل کے بعد معقول تعداد میں ملازمت کے مواقع فراہم نہیں کرنے کی وجہ سے تعلیم یافتہ نوجوان یا تو دوسری ریاستوں کا رخ کر رہے ہیں یا نجی کاروبار کی شروعات کررہے ہیں ۔

واضح رہے کہ گزشتہ فروری ماہ میں منعقد مومنٹم جھارکھنڈ گلوبل سمٹ میں ملک و بیرون ملک کے سینکڑوں سرمایہ کاروں کے ساتھ ایم او یوز کیے گئے تھے ، جس کے تحت تین لاکھ 10 ہزار کروڑ روپے سے زائد رقم کی سرمایہ کاری کی تجاویز آئی تھیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز