پھر شرمسار ہوئی انسانیت، چارپائی پر لٹا کر سات کلومیٹر تک پیدل چل کر پہنچائی لاش

كانكیر کا انتہائی حساس علاقہ كوئلبڈا بلاک قبائلی اکثریتی علاقہ ہے، جہاں کمیونٹی صحت کے مرکز میں علاج کے دوران میت کی لاش کے لئے ایمبولینس نہیں ملی اور رشتہ داروں نے چارپائی پر لٹا کر اسے گھر گرام مردا تک پہنچایا۔

Jan 21, 2017 05:30 PM IST | Updated on: Jan 21, 2017 05:30 PM IST

رائے پور۔ چھتیس گڑھ میں كانكیر کا محکمہ صحت ایک بار پھر شرمسار ہوا ہے۔ كانكیر کا انتہائی حساس علاقہ كوئلبڈا بلاک قبائلی اکثریتی علاقہ ہے، جہاں کمیونٹی صحت کے مرکز میں علاج کے دوران میت کی لاش کے لئے ایمبولینس نہیں ملی اور رشتہ داروں نے چارپائی پر لٹا کر اسے گھر گرام مردا تک پہنچایا۔

کیا ہے معاملہ

پھر شرمسار ہوئی انسانیت، چارپائی پر لٹا کر سات کلومیٹر تک پیدل چل کر پہنچائی لاش

كوئلبڈا کمیونٹی صحت کے مرکز میں گرام مردا رہائشی جان سنگھ کی جمعرات کو طبیعت خراب ہو جانے پر اسی چارپائی پر لٹا کر علاج کے لئے لایا گیا تھا۔ بتا دیں کہ جان سنگھ ٹی بی کا پرانا مریض تھا، جسے سات کلومیٹر دور چارپائی پر لٹا کر ہسپتال میں داخل کرایا گیا۔ علاج کے دوران اس کی موت ہو گئی، لیکن موجود میڈیکل حکام نے لاش کے لئے گاڑی کی معلومات نہیں دی اور لواحقین اسی چارپائی پر جان سنگھ کی لاش کو لٹا کر سات کلومیٹر واپس گاؤں لائے۔

میڈیکل آفیسر کو کیا معطل

معاملہ روشنی میں آنے کے بعد كانکیر کلکٹر مسز شمی عابدی نے معاملے کو سنگین مانتے ہوئے كوئلبڈا کمیونٹی صحت کے مرکز کے میڈیکل آفیسر اے کے سنبھاكر کو فوری طور پر معطل کر دیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز