جھارکھنڈ کے بیشتر علاقے قدرتی دولت سے مالا مال ، لیکن عوام حکومتی فلاحی منصوبوں سے محروم

Apr 27, 2017 10:27 PM IST | Updated on: Apr 27, 2017 10:27 PM IST

رانچی ( نوشاد عالم ) جھارکھنڈ کے بیشتر علاقے قدرتی دولت سے مالا مال ہیں لیکن ان میں کئی ایسےعلاقے ہیں، جہاں عوام حکومت کے فلاحی منصوبوں سے کوسوں دور ہیں ۔ ای ٹی وی کی خصوصی ٹیم نے ان میں سے رام گڑھ ضلع علاقہ کا دورہ کرکے حقیقت جاننے کی کوشش کی ۔

قدرت نے ریاست جھارکھنڈ کی سرزمین کو بیش بہا دولت سے نوازا ہے ۔ ریاست کے مختلف علاقوں میں کوئلے کی کان واقع ہے ۔ ان میں سے ایک رام گڑھ ضلع کے گھاٹو نامی علاقہ بھی شامل ہے۔ اس علاقہ میں ٹاٹا اسٹیل کی کمپنی قائم ہے ۔ یہاں آباد لوگوں کو کمپنی کے ذریعہ مفت بجلی ، پانی اور رہائش جیسی سہولتیں فراہم کی گئی ہیں ، لیکن علاقے کے لوگ حکومت کے فلاحی منصوبوں سے پوری طرح محروم ہیں ۔

جھارکھنڈ کے بیشتر علاقے قدرتی دولت سے مالا مال ، لیکن عوام حکومتی فلاحی منصوبوں سے محروم

سماجی کارکن عبدالقیوم و دیگرمقامی لوگوں کے مطابق پورے علاقہ میں چھوٹی چھوٹی بستیاں قائم ہیں ۔ ان میں مسلمانوں کی کافی تعداد ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ کمپنی کے مسلم ملازمین کی حالت اقتصادی طور پر تشفی بخش ہے ، لیکن ایک بڑا طبقہ بے روزگاری سے پریشان ہے ،یا چھوٹے چھوٹے روزگار کرنے پر مجبور ہے۔

واضح رہے کہ ریاست کی تشکیل کو 17 سال سے زائد کا عرسہ گزر چکا ہے ، لیکن ستم ظریفی یہ ہے کہ قدرتی ذخائر سے مالا مال ریاست کے لوگ آج بھی غربت اور افلاس کی زندگی جینے پر مجبور ہیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز