جھارکھنڈ میں سنی وقف بورڈ کے ملازمین کی تنخواہ میں کٹوتی کی خبر ، دفتر میں افرا تفری کا ماحول

Jan 04, 2017 11:12 PM IST | Updated on: Jan 04, 2017 11:12 PM IST

رانچی : جھارکھنڈ سنی وقف بورڈ کے دفتر میں عارضی طور پر کام کررہے ملازمین تنخواہ میں ممکنہ کمی کی خبر سے پریشان ہیں ۔ یہ ملازمین پہلے ہی پچھلے دس ماہ سے تنخواہ سے محروم ہیں۔ تنخواہ میں کمی کی خبر سے ان کی پریشانیوں میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔ ادھر سماجی کارکنان و دانشوران کا کہنا ہے کہ بورڈ کو متحرک بنانے کے تئیں حکومت کبھی سنجیدہ نہیں رہی ہے ، جس کی وجہ سے وقف املاک کے بہتر تحفظ کا امکان روشن نہیں ہو سکا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ جھارکھنڈ سنی وقف بورڈ کے دفتر میں کام کاج محض تین ملازمین کے ذمہ ہے ۔ عارضی طور پر بحال یہ ملازمین جون 2009 سے اپنے فرائض انجام دے رہے ہیں۔ ایک چھوٹے اور بدحال کمرے میں کام کرنے پرمجبور یہ ملازمین پچھلےدس ماہ سے تنخواہ سےمحروم ہیں۔ وہیں متعلقہ محکمہ کے ذریعہ تنخواہ میں کٹوتی کی خبر سے ان کی پریشانیاں مزید بڑھ گئی ہیں۔

جھارکھنڈ میں سنی وقف بورڈ کے ملازمین کی تنخواہ میں کٹوتی کی خبر ، دفتر میں افرا تفری کا ماحول

واضح رہے کہ وقف بورڈ میں پچھلے دو سالوں سے کوئی چیئرمین نہیں ہے ۔ بورڈ کی عدم پائیداری کی وجہ سے بورڈ کے تمام کام کاج سی ای او اور عارضی ملازمین کے بھروسے انجام دئے جارہے ہیں ۔ تاہم سی ای او نثار احمد کا کہنا ہے کہ ان ملازمین کی تنخواہ میں کٹوتی کا معاملہ فی الحال زیر غور ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز