مندسور: ڈی ایم، ایس پی ہٹائے گئے، روک کے باوجود کسانوں سے ملنے جا رہے ہیں راہل

Jun 08, 2017 10:08 AM IST | Updated on: Jun 08, 2017 10:08 AM IST

مندسور۔ مدھیہ پردیش کے مندسور میں پولیس فائرنگ میں چھ کسانوں کی موت کے بعد تشدد کی لہر دوسرے اضلاع میں بھی پھیل گئی۔ کسانوں کی تحریک اور اس کے بعد ہوئے تشدد کے بعد مندسور ڈی ایم سوتنتركمار سنگھ اور ایس پی او پی ترپاٹھی ہٹائے گئے۔ شیوپوری کلکٹر اوم پرکاش شریواستو کو مندسور کا نیا کلکٹر بنایا گیا ہے۔

خبر ہے کہ راہل گاندھی مقامی ضلع انتظامیہ کی منظوری نہ ملنے کے باوجود مندسور کے لئے روانہ ہو گئے ہیں۔ ضلع انتظامیہ نے کئی اضلاع میں انٹرنیٹ سروس کو بھی بند کر دیا ہے۔ کسان تشدد کی آگ مندسور کے علاوہ دھار، هردا اور سیہور ضلع تک پہنچ گئی ہے۔ آج مدھیہ پردیش کے کسانوں کی تحریک کا آٹھواں دن ہے۔ مندسور میں اس واقعہ کے بعد ضلع انتظامیہ نے تشدد زدہ پپلیا منڈی علاقے میں کرفیو لگا دیا ہے۔

مندسور: ڈی ایم، ایس پی ہٹائے گئے، روک کے باوجود کسانوں سے ملنے جا رہے ہیں راہل

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز