ہندوستانی مسلمان مذہب کے اعتبار سے مسلمان، لیکن قومیت کے اعتبارسے ہندو ہیں : بھاگوت

Feb 08, 2017 07:58 PM IST | Updated on: Feb 08, 2017 07:58 PM IST

بیتول۔ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے سرسنگھ چالک موہن بھاگوت نے آج ملک کے مسلمانوں کے سلسلے میں کہا کہ وہ مذہب کے اعتبار سے مسلمان ہیں لیکن قومیت کے اعتبارسے ہندو ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہم سب ہندو ہیں۔ مسٹر بھاگوت نے مدھیہ پردیش کے بیتول پولیس پریڈ گراؤنڈ میں منعقد ہندو کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت ماتا کو ہندوستان کہتے ہیں اور یہاں ہندو لوگ رہتے ہیں۔ انہوں نے کانفرنس میں راشٹریہ مسلم منچ کی جانب سے بھارت ماتا کی آرتی کرنے کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ اگر سماج ہے تو ہمیں ایک ہونا ہی پڑے گا۔ دیوی دیوتاؤں، ذات پات کے امتیاز کو چھوڑ کر آر ایس ایس کے سربراہ نے 'بھارت ماتا کی جے'کو دل کی زبان بتاتے ہوئے کہا کہ ہمارے ملک میں زبانیں اگرچہ بہت سے ہیں، لیکن دل کی زبان ایک ہے۔ تمل ناڈو، گجرات، بنگال میں تمام بھارت ماتا کی جے ہی بولتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ زبان کے امتیاز کو چھوڑو، ذات پات کے امتیاز کو ختم کرو، یہی ہندو کانفرنس کا بنیادی منتر ہے۔ ہمارے رشيو ں نے بھی کبھی ذات پات کی جئے نہیں کہی۔

سرسنگھ چالک نے کہا کہ پوری دنیا کہتی ہے کہ ہندوستان کو وشو گرو بنانا ہے، لیکن ہندوستان کی ذمہ داری کتنی ہے۔ ہندوستان کو ہم ہندو چلاتے ہیں، پھر بھی ہم پسماندہ کیوں ہیں۔ ہمارے ہی لوگ کئی موقعوں پر ملک کے خلاف کھڑے ہو جاتے ہیں۔ انہوں نے لوگوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کو اتنا امیر بنائیں کہ کوئی آنکھ اٹھا کربھی نہیں دیکھ پائے۔

ہندوستانی مسلمان مذہب کے اعتبار سے مسلمان، لیکن قومیت کے اعتبارسے ہندو ہیں : بھاگوت

پی ٹی آئی

ملک میں اتحاد کا منتر دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وقت آ گیا ہے کہ تمام ہندو ہندوستان کو وشو گرو بنانے کے لئے ایک ہو جائیں۔ پروگرام میں ستپال مہاراج بھی موجود تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز