ہندوستان کی 20 فیصد آبادی کے مذہبی جذبات سے کھیلنا مناسب نہیں : مولانا الیاس ندوی

لوک سبھا میں تین طلاق کا بل پاس ہو نے سے ملک بھر کے مسلمانوں میں بے چینی ہے ۔ تین طلاق سے متعلق بل پر مسلم پرسنل لا بورڈ کے ممبران اس معاملے پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے سخت تشویش کا اظہار کر ہے ہیں۔

Dec 29, 2017 04:31 PM IST | Updated on: Dec 29, 2017 04:31 PM IST

بھٹکل / رانچی : لوک سبھا میں تین طلاق کا بل پاس ہو نے سے ملک بھر کے مسلمانوں میں بے چینی ہے ۔ تین طلاق سے متعلق بل پر مسلم پرسنل لا بورڈ کے ممبران اس معاملے پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے سخت تشویش کا اظہار کر ہے ہیں۔ بھٹکل میں بورڈ کے اساسی رکن مولانا الیاس ندوی نے کہا کہ 20 فیصد آبادی کے مذہبی جذبات سے کھیلنا ملک کے حق میں بہتر بات نہیں ہے۔

مولانا الیاس ندوی نے نام نہاد سیکولر پارٹیوں پر بھی سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ آج ایوان میں بل کی مخالفت نہ کر کے سیکو لر پارٹیوں کا نفاق بھی سامنے آگیا ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ مولانا نے اس امید کا اظہار کیا کہ شر کے اس معاملہ میں خیر کے پہلو اجاگر ہوں گے ۔

ہندوستان کی 20 فیصد آبادی کے مذہبی جذبات سے کھیلنا مناسب نہیں : مولانا الیاس ندوی

ادھر جھارکھنڈ کے علمائے کرام اور گھریلوں خواتین نے بھی تین طلاق کے تعلق سے بل پر سخت رد عمل کا اظہار کیا ہے ۔ رانچی میں ای ٹی وی سے خصوصی بات چیت میں انہوں نے شرعی معاملات میں مداخلت قرار دیتے ہوئے مرکزی حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ۔ انہوں نے اس معاملہ میں شریعت میں کسی پھیر بدل کو غیرضروری بتایا ہے ۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز