جھارکھنڈ : رام گڑھ میں علیم الدین کے قتل معاملہ میں 1 گرفتار، 12 کے خلاف کیس درج

Jul 01, 2017 01:35 PM IST | Updated on: Jul 01, 2017 02:05 PM IST

رانچی : جھارکھنڈ کے رام گڑھ میں نام نہاد گئوركشكو ںکے ہاتھوں تشدد میں علیم الدین کے مارے جانے کے بعد معاملہ میں اب تک صرف ایک گرفتاری کی گئی ہے۔ تاہم اس سلسلہ میں ملزم 8 دیگر کے خلاف بھی پولیس نے گرفتاری وارنٹ جاری کیا ہے۔ کیس میں 12 لوگوں کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔ علاقہ میں دفعہ 144 نافذ ہے ۔ تاہم فی الحال حالات معمول ہیں ۔

ادھر وزیر اعلی رگھوور داس نے رام گڑھ اور گریڈیہہ معاملہ کی فوری جانچ کا حکم دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی وزیر اعلی نے گزشتہ روز دیوگھر میں یہ اعلان کیا کہ گوشت سے وابستہ کیس کے سامنے آنے پر مقامی پولیس اسٹیشن کے ایس ایچ او کو معطل کر دیا جائے گا۔ساتھ ہی ساتھ ریاستی حکومت نے مقتول کے اہل خانہ کو 2 لاکھ کا معاوضہ دینے کا اعلان کیا ہے، مگر ارکین کنبہ اس رقم سے کافی ناخوش ہیں۔

جھارکھنڈ : رام گڑھ میں علیم الدین کے قتل معاملہ میں 1 گرفتار، 12 کے خلاف کیس درج

رام گڑھ کے ایس پی کشور کوشل کا کہنا ہے کہ کچھ گرفتاریاں بھی ہوئی ہیں۔ کچھ نامزد ملزموں کی گرفتاریاں بھی ہوئی ہیں، قتل کے بعد علاقہ میں سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے ہیں۔ اب شہر میں صورتحال مکمل طور پر کنٹرول میں ہے۔

قابل ذکر ہے کہ علیم الدین عرف اصغر انصاری ایک ماروتی وین میں مبینہ طور پر گوشت لے جا رہے تھے، تبھی کسی نے افواہ پھیلا دی کہ وین میں بیف ہے۔ لوگوں کے ایک گروپ نے باجرٹانڈ گاؤں میں اصغر کو روکا اور اس پر وحشیانہ طور پر حملہ کر دیا اس کی وین میں آگ لگا دی۔ پولیس نے اسے بھیڑ سے بچایا اور اسپتال میں داخل کرایا، جہاں علاج کے دوران اس کی موت ہوگئی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز