حراست میں لئے گئے راہل گاندھی، روک کے باوجود کسانوں سے ملنے مندسور جا رہے تھے

Jun 08, 2017 01:47 PM IST | Updated on: Jun 08, 2017 01:47 PM IST

نياگاؤں (نیمچ)۔  مدھیہ پردیش کے کرفیو سے متاثر مندسور ضلع میں جانے کی کوشش کر رہے کانگریس کے قومی نائب صدر راہل گاندھی کو نیمچ ضلع کے سرحدی نياگاؤں میں حراست میں لے لیا گیا۔ اب سے کچھ دیر پہلے راجستھان کے راستے مدھیہ پردیش کی سرحد میں داخل ہوئے مسٹر گاندھی کو نياگاؤں پھاٹک پر حراست میں لے لیاگیا۔ انہیں پولیس وین میں بیٹھا کر نیمچ کی طرف لے جایا گیا ہے۔ ان کے ساتھ پارٹی کے کئی اور کارکن بھی حراست میں لئے گئے ہیں۔

اس سے پہلے مسٹر گاندھی نے میڈیا سے بات چیت میں الزام لگایا کہ نریندر مودی حکومت امیروں کے لئے کام کرنے والی اور کسان مخالف حکومت ہے۔ بڑے صنعت کاروں کے ہزاروں کروڑ کے قرض معاف کر دیے گئے اور کسانوں کے لئے حکومت نے کوئی قدم نہیں اٹھایا۔ انہوں نے کہا کہ انہیں مدھیہ پردیش میں بھی کسانوں سے ملنے سے روکا جا رہا ہے، اسی طرح کا سلوک اترپردیش میں بھی کیا گیا تھا۔

حراست میں لئے گئے راہل گاندھی، روک کے باوجود کسانوں سے ملنے مندسور جا رہے تھے

اس سے پہلے، کانگریس کے قومی نائب صدر راہل گاندھی مدھیہ پردیش کے مندسور میں پولیس فائرنگ میں مارے گئے کسانوں کے لواحقین سے ملنے کے لئے مدھیہ پردیش اور راجستھان کی سرحد پر واقع نیمچ ضلع کے سرحدی نياگاؤں پہنچے ۔ مسٹر گاندھی کو انتظامیہ نے کرفیو سے متاثر مندسور آنے کی اجازت نہیں دی ہے، جس کے پیش نظر نياگاؤں میں بڑی تعداد میں سیکورٹی فورس تعینات کی گئی ہے۔ نياگاؤں میں مسٹر گاندھی کو روکنے کی سیکورٹی فورسز کی مشقت کے درمیان مسٹر گاندھی اور کانگریس کے اعلی رہنما کھیتوں کے راستے مندسور پہنچنے کی فراق میں تھے۔

اس سے پہلے مسٹر گاندھی راجستھان کے نمباہیڑا سے موٹر سائیکل سے نياگاؤں پہنچے۔ مدھیہ پردیش کی سر حد لگتے ہی انتظامیہ نے انہیں روکنے کی کوشش کی، جس کی وجہ سے وہ دوسرے لیڈروں کے ساتھ کچھ دور پیدل چل کر نياگاؤں کے ریلوے پھاٹک کی پٹریاں پار کر دوسری طرف آئے۔ کانگریس جنرل سکریٹری دگ وجے سنگھ، ایم پی اور سابق مرکزی وزیر کمل ناتھ سمیت پارٹی کے کئی دیگر سینئر لیڈر اور جنتا دل (یونائیٹڈ) کے لیڈر شرد یادو بھی مسٹر گاندھی کے ساتھ موجود ہیں۔ منگل کو مندسور کے پپليامنڈي میں پولیس کی فائرنگ میں چھ کسانوں کی موت ہو گئی تھی، جس کے بعد علاقے میں بڑے پیمانے پر تشدد کی وارداتیں ہو رہی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز