شہید جوانوں کی شہادت کو حکومت بیکار نہیں جانے دے گی، اس کا معقول جواب دیا جائے گا : راجناتھ

Apr 25, 2017 02:19 PM IST | Updated on: Apr 25, 2017 02:19 PM IST

رائے پور۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ نکسل متاثرہ علاقوں میں ترقیاتی سرگرمیوں کو روکنے کی نکسلیوں کی طرف سے مسلسل ہو رہی کوششوں کے پیش نظر نئی حکمت عملی طے کرنے کے لئے متاثر ریاستوں کے ساتھ آٹھ مئی کو طلب اعلی سطحی اجلاس میں تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ مسٹر سنگھ نے سکما میں کل کے نکسل حملے پر آج یہاں ایک اعلی سطحی اجلاس کے بعد صحافیوں سے بات چیت میں کہا کہ ملک میں غریبوں کے سب سے بڑے دشمن بائیں بازو عسکریت پسند ہیں، وہ متاثرہ علاقوں میں چل رہی ترقیاتی سرگرمیوں کو کسی قیمت پر روکنا چاہتے ہیں ، جس سے یہاں کے رہائشی ترقی کے مرکزی دھارے سے کبھی نہیں شامل ہو سکیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کی اس منشا کو حکومت قطعی کامیاب نہیں ہونے دے گی، اور اس نے اسے ایک چیلنج کے طور پر لیا ہے۔

مسٹر سنگھ نے کہا کہ نکسلی چھتیس گڑھ کی طرح ہی دوسری متاثر ریاستوں میں بھی ترقی کی سرگرمیوں کو روک رہے ہیں، تو آٹھ مئی کو دہلی میں طلب میٹنگ میں اس پر وسیع تبادلہ خیال کیا جائے گا، اور ضرورت کے مطابق نئی حکمت عملی طے کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ مربوط نکسل علاقے ترقی کی منصوبہ بندی کا بھی نئے سرے سے جائزہ لیا جائے گا اور ضرورت پڑنے پر اس میں بھی تبدیلی کی جائے گی۔ انہوں نے کل کے حملے میں سیکورٹی فورسز سے کسی قسم کی غلطی سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ یہ وقت الزام کا نہیں ہے، اور نہ ہی سیکورٹی فورسز میں کسی قسم سے تال میل میں کمی ہے۔ انہوں نے اسے انتہائی سفاکانہ قتل قرار دیا۔ مسٹر سنگھ نے کہا کہ شہید جوانوں کی شہادت کو حکومت بیکار نہیں جانے دے گی اور اس کا معقول جواب دیا جائے گا۔

شہید جوانوں کی شہادت کو حکومت بیکار نہیں جانے دے گی، اس کا معقول جواب دیا جائے گا : راجناتھ

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز