آر ایس ایس لیڈر کا متنازع بیان ، وزیر اعلی کا سر کاٹ کرلائیں اور پائیں ایک کروڑ ، کانگریس نے لیا آڑے ہاتھوں 

Mar 02, 2017 10:23 PM IST | Updated on: Mar 02, 2017 10:23 PM IST

بھوپال : مدھیہ پردیش کے اجین میں راشٹریہ سویم سیوک سنگھ( آر ایس ایس) کے ایک لیڈر ڈاکٹر کندن چندراوت کے کیرالہ کے وزیر اعلی کا سر کاٹ کر لانے والے بیان پر تنازع کھڑا ہو گیا ہے۔ اس معاملے میں جہاں سنگھ نے ایک طرح سے بیان سے کنارہ کشی کرتے ہوئے اس بیان کی سخت مذمت کی ہے، وہیں اہم اپوزیشن پارٹی کانگریس اور مارکسی کمیونسٹ پارٹی (سی پی ایم) نے سنگھ کے لیڈر کے اس بیان کی سخت تنقید کرتے ہوئے ان کے خلاف قانونی کارروائی کی مطالبہ کیا ہے۔

اجین میں بدھ کو سنگھ کے ایک لیڈر ڈاکٹر چندراوت نے ایک عوامی پروگرام میں کہا ہے 'کوئی سویم سیوکوں کے قاتل کیرالہ کے وزیر اعلی کا سر کاٹ کر لا دے، اپنی ایک کروڑ کی جائیداد اس کے نام کر دوں گا۔ یہ بیان میڈیا میں آنے کے بعد سنگھ کے لئے کل ہند سطح پر انتخابی مہم چلانے کے معاون سربراہ جے نندکمار کی طرف سے یہاں جاری کئے گئے بیان میں ایک طرح سے صفائی دی گئی ہے۔

آر ایس ایس لیڈر کا متنازع بیان ، وزیر اعلی کا سر کاٹ کرلائیں اور پائیں ایک کروڑ ، کانگریس نے لیا آڑے ہاتھوں 

اس میں کہا گیا ہے کہ کیرالہ میں مارکسوادیوں کی طرف مسلسل ہو رہے قتل کی مخالفت میں ایک سے تین مارچ کے درمیان مختلف تنظیموں کے ذریعہ مظاہرے منعقد کئے جا رہے ہیں۔ اسی ترتیب میں یکم مارچ کو اجین میں جن ادھیکارکمیٹی کی طرف سے غم و غصہ اجتماع اور دھرنے میں ڈاکٹر چندراوت کا کیرالہ کے وزیر اعلی کے سلسلے میں متنازعہ بیان سنگھ کے نوٹس میں آیا ہے۔

مسٹر نندکمار کے مطابق اس سلسلے میں سنگھ کا ماننا ہے کہ ان پروگراموں میں کئی قسم کی تنظیموں کے کارکن اسپیکر کے طور پر آتے ہیں۔ اس لئے ان کی طرف سے دیا گیا بیان 'سنگھ کا بیان نہیں ہے۔ سنگھ اپنے قیام کے وقت سے ہی انسانیت کے جذبہ کو فروغ دینے اور سماج کی خدمت کے کام میں مشغول ہے اور کبھی بھی تشدد میں یقین نہیں رکھتا۔ سنگھ جمہوری طریقے سے احتجاج کرنے پر یقین کرتا ہے۔اس لیے سنگھ ڈاکٹر کندن چندراوت کے بیان کی سخت مذمت کرتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز