اکھاڑہ پریشد کے صدر نے کہا : سنتوں کو بلیک میلنگ نہیں کرنی چاہئے

سادھو سنتو ں کے مرکزی ادارے آل انڈیا اکھاڑہ پریشد نے مدھیہ پردیش میں باباؤں کے وزیر مملکت کا عہدہ قبول کرنے کی مذمت کی ہے۔

Apr 05, 2018 11:24 PM IST | Updated on: Apr 05, 2018 11:24 PM IST

سادھو سنتو ں کے مرکزی ادارے آل انڈیا اکھاڑہ پریشد نے مدھیہ پردیش میں باباؤں کے وزیر مملکت کا عہدہ قبول کرنے کی مذمت کی ہے۔ اکھاڑہ پریشد کے صدر مہنت نریندر گیری نے آج یہاں کہا کہ سادھو سنت کا درجہ کسی بھی وزیر سے کہیں اوپر ہوتا ہے۔ سادھو سنتوں کو اس لالچ کو ٹھکرانا چاہئے۔ ایسا نہیں کرنے پر معاشرے میں سادھو سنتوں کا احترام یقینی طور پر کم ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مدھیہ پردیش حکومت نے سادھو سنت سماج کو اس قسم کا لالچ دے کر یقینی طور پر قابل مذمت کام کیا ہے۔

مہنت نریندر گیری نے کہا کہ اگر سادھو سنت وزیر بن جائے تو کیسا احترام ہوگا۔ وزیر کو سادھو سنت ہونا چاہئے اور سنتوں کو ریاست کے اقتدار سے اپنے کو دور رکھنا چاہئے۔ اقتدار سنتو ں کے لئے نہیں ہوتااور انہیں اپنے کام کے لئے کسی عہدے کی ضرورت بھی نہیں ہونی چاہئے۔انہوں نے کہا کہ اگر کسی سنت کو نرمدا ندی کے تحفظ کے ذریعہ سماج کی خدمت کرنی ہے یا اس سلسلہ میں کسی گھوٹالہ کا انکشاف کرنا ہے تو ایسا کرنے سے اسے کون منع کرتا ہے ، لیکن یہ کیا ہے کہ وزیر مملکت کا عہدہ ملنے کے بعد متعلقہ سنت کہہ رہے ہیں کہ کوئی گھوٹالہ ہوا ہی نہیں ہے اور سب کچھ ٹھیک ہے۔

اکھاڑہ پریشد کے صدر نے کہا : سنتوں کو بلیک میلنگ نہیں کرنی چاہئے

نریندر گری مہاراج ۔ فائل فوٹو

شری پنچایتی اکھاڑا اداسین نروان کے شري مهنت مہیشور داس نے کہا کہ سادھو سنتوں کا سچائی کے راستے پر چلنا اور عوامی بہبود اور مفاد کی بات سوچنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ لالچ اور سنت کا کوئی لینا دینا نہیں ہے۔

اکھل بھارتیہ دھرماچاريہ منچ کے قومی جنرل سکریٹری سوامی کشیمني نے کہا کہ لالچ لے کرسادھو سنت اور مدھیہ پردیش حکومت کے سربراہ نے تاریخ اور مذہب کو داغدار کرنے کا کام کیا ہے، اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

Loading...

واضح رہے کہ کچھ سادھو سنتو ں نے کمپیوٹر بابا نامی ایک بابا کی قیادت میں حال ہی میں مدھیہ پردیش حکومت کی جانب سے نکالی گئی نرمدا سیوا یاترا کے دوران ہونے والی بدعنوانی کو اجاگر کرنے کی وارننگ دیتے ہوئے اپریل مہینے میں ہی 'نرمدا گھوٹالہ رتھ یاترا 'نکالنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے بعد ریاستی حکومت کی جانب سے نرمدا ندی کے تحفظ کے سلسلے میں قائم خصوصی کمیٹی میں نرمدانندجي، هرهرانندجي، کمپیوٹر بابا، بھيو مہاراج اور یوگیندر مہنت کو بھی شامل کرکے انہيں وزیر مملکت کا درجہ دیا گیا ہے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز