بھوپال میں سرسید احمد خان کے افکار اور تعلیمی تحریکات پر سیمینار کا انعقاد

Oct 13, 2017 05:27 PM IST | Updated on: Oct 13, 2017 05:27 PM IST

 بھوپال۔ منشی حسین خان ٹیکنکل انسٹی ٹیوٹ کے زیر اہتمام بھوپال میں ہفت روزہ سر سید تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ ہفت روزہ تقریب کے افتتاح کے موقع پر  سر سید اور جدید ہندستان کے عنوان سے منعقدہ سمینار میں دانشوروں نے شرکت کی اور علی گڑھ  مسلم یونیورسٹی کے بانی سر سید احمد خانکو جدید ہندستان  کا بانی قرار دیا ۔ سر سید احمد خان ایک مفکر، مدبر، انشا پرداز، مصلح قوم اور جدید ہندوستان کے بانی تھے ۔ سر سید احمد خان نے 17 اکتوبر 1817 کو دہلی میں آنکھ کھولی تھی اور 27 مارچ 1898 کو اس سرائے فانی سے کو چ کیا تھا۔ سر سید نے اپنے افکار اور تعلیمی تحریک  سے نہ صرف مسلمانوں بلکہ ہندوستانیوں کی سر بلندی کے لئے جو کارہائے نمایاں انجام دئے ، وہ بے مثل ہیں ۔ سر سید نے ایک ایسے وقت میں ہندوستانیوں کی سر بلندی کا خاکہ تیار کیا تھا جب ملک کا شیرازہ بکھرا ہوا تھا ۔ انہوں نے نہ صرف قوموں کے بیچ اتحاد پیدا کیا بلکہ قوموں کی ترقی کے لئے تعلیم کے حصول کو بنیاد قرار دیا۔

بھوپال کے منشی حسین خان ٹیکنکل انسٹی ٹیوٹ میں ایم ایچ کے اور علی گڑھ اولڈ بوائز ایسو سی ایشن کے مشترکہ بینر تلے منعقدہ سمینار میں سر سید کی حیات و خدمات کے ساتھ سر سید کی تعلیمی تحریک پر بھی روشنی ڈالی گئی۔ مقالہ نگاروں نے سر سید کی تعلیمی تحریک کے  ساتھ اردو ادب پر سرسید کے احسانات کا بھی مبسوط انداز میں ذکر کیا ۔ بھوپال میں منعقدہ سر سید ہفت روزہ تقریب میں مقالہ نگاروں نے سر سید کے افکار اور تعلیمی تحریک کو  نصاب میں شامل کرنے کا مطالبہ کیا ۔ اس موقع پر کچھ شعرا نے سرسید احمد خان کو منظوم خراج عقیدت بھی پیش کیا۔

بھوپال میں سرسید احمد خان کے افکار اور تعلیمی تحریکات پر سیمینار کا انعقاد

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز