جھارکھنڈ : مختلف سماجی تنظیموں نے انجمن اسلامیہ اور وقف بورڈ پر لگائے سنگین الزامات ، کیا یہ دعوی ؟

Oct 20, 2017 09:11 PM IST | Updated on: Oct 20, 2017 09:12 PM IST

رانچی : رانچی کی مختلف سماجی تنظیموں نے انجمن اسلامیہ اور وقف بورڈ پر سنگین الزامات لگائے ہیں۔ ان موضوعات کو لے کر ایک اہم نشست کا بھی اہتمام کیا گیا ، جس میں ان تنظیموں کے نمائندوں نے شرکت کی ۔عظیم مجاہد آزادی مولانا ابولکلام آزاد کے ذریعہ قائم کردہ انجمن اسلامیہ کی نئی کمیٹی کے لئے ہونے والے انتخابات کے خلاف مختلف سماجی تنظیموں نے آوازیں بلند کی ہیں ۔

خیال رہے کہ وقف بورڈ کے حکم نامہ کے بعد الیکشن کنوینر حسیب اختر نے پانچ نومبر کو انتخابات کرانے کا اعلان کیا ہے، لیکن مختلف سماجی تنظیموں کا الزام ہے کہ فرضی ووٹر کے ذریعہ انتخابات کرانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

جھارکھنڈ : مختلف سماجی تنظیموں نے انجمن اسلامیہ اور وقف بورڈ پر لگائے سنگین الزامات ، کیا یہ دعوی ؟

واضح رہے کہ انجمن کے بائی لاز کے مطابق ہر تین سال میں 16 رکنی کمیٹی کے لئے انتخابات کرایا جانا ہے۔ اس انتخاب میں شہر اور اس کے مضافاتی علاقوں کی فلاحی تنظیمیں ووٹر کی حیثیت سے حصہ لیتی ہیں ۔ اس نشست میں شامل نمائندوں کا الزام ہے کہ سینکڑوں کی تعداد میں فرضی ووٹروں کا نام لسٹ سے نہیں ہٹایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ مسلمانوں کے معاشی اور تعلیمی ترقی کے مقصد سے 1917 میں قائم ہوا یہ ادارہ ریاست کا سب سے بڑا اور قدیم فلاحی ادارہ ہے ، جس کے تحت تقریبا 12 ذیلی ادارے قائم ہیں ۔ ان مالیت تین سو پچاس کروڑ سے زائد رقم کی بتائی جاتی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز