حیدرآباد سے جبل پور آکر بھیک مانگ رہے تین روہنگیا پناہ گزین گرفتار ، کیمپ واپس بھیجا گیا

Nov 30, 2017 04:54 PM IST | Updated on: Nov 30, 2017 04:54 PM IST

جبل پور: مدھیہ پردیش کی جبل پور پولیس نے بھیک مانگتے تین روہنگیا پناہ گزینوں کو پکڑا ہے۔ آندھرا پردیش کے حیدرآباد میں واقع بالا پور تھانہ کے تحت پناہ گزین کیمپ میں رکھے گئے یہ تینوں پناہ گزین یہاں آکر بھیک مانگ رہے تھے۔اطلاع ملنے پر لارڈ گنج پولیس نے تینوں کو حراست میں لے کر پوچھ تاچھ کی۔تفتیش کے بعد پولیس ٹین کے ساتھ تینوں کو حیدرآباد میں واقع پناہ گزین کیمپ واپس بھیج دیا گیا۔

لارڈ گنج تھانہ انچارج سشیل شوہان کے مطابق منگل کے روز شام کو تین افراد کے بازار میں بھیک مانگنے کی اطلاع موصول ہوئی۔اطلاع تھی کہ تینوں کی بولی الگ ہے اور یہ فقیر دہشت گردوں کے ذریعہ اپنے پورے خاندان کو اپنی آنکھوں کے سامنے کاٹ کر قتل کرنے کی بات کررہے ہیں۔اطلاع پر تینوں افراد کو پولیس نے حراست میں لے لیا ۔پوچھ تاچھ کے دوران انہوں نے اپنےنام رستم علی(35)،ابوالحسین(65) اور نظام الدین (25) بتائے۔ تینوں نے روہنگیا مسلمان ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ وہ میانمار میں ہورہے فساد کی وجہ سے بنگلہ دیش ہوتے ہوئے ہندوستان پہنچے تھے۔

حیدرآباد سے جبل پور آکر بھیک مانگ رہے تین روہنگیا پناہ گزین گرفتار ، کیمپ واپس بھیجا گیا

تینوں نے بتایا کہ ہندوستان آنے پر انہیں حیدرآباد میں واقع پناہ گزین کیمپ میں رکھا گیا تھا۔انہوں نے بتایا کہ تینوں چار دن پہلے ٹرین سے جبل پور آئے اور بھیک مانگ کر گزارا کررہے تھے۔رات کو الگ الگ مسجدوں میں سوجاتے تھے۔ان کا کنبہ ابھی بھی پناہ گزین کیمپ میں ہے۔بتائی گئی معلومات کی بنیاد پر تینوں کی حیدرآباد کے بالا پور تھانے میں تفتیش کی گئی۔بالاپو رتھانہ انچارج کے ذریعہ تصدیق کرنے کے بعد تینوں کو پولیس دستے کے ساتھ حیدرآباد روانہ کردیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز