گائے اسمگلنگ کے شک میں تین نوجوانوں کی پٹائی کا ویڈیو وائرل ، پولیس نے جانچ کا دیا حکم

Aug 03, 2017 06:21 PM IST | Updated on: Aug 03, 2017 07:01 PM IST

بیتول: مدھیہ پردیش کے ضلع بیتول کے موهدا تھانہ علاقے میں گائے کی اسمگلنگ کے شک کے الزام میں تین نوجوانوں کے ساتھ کی گئی مارپیٹ کے واقعہ کا ویڈیو وائرل ہونے کے بعد آج اس کی جانچ کے احکامات دیے گئے ہیں۔ پولیس کے ذرائع کے مطابق مار پیٹ کا ویڈیو وائرل ہوتے ہی پولیس سپرنٹنڈنٹ ڈی آر تینيوار نے اس معاملے میں تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

بتایا گیا ہے کہ ڈلهاريا گاؤں میں گزشتہ جمعہ کو پہلے ہجوم نے گائے کی اسمگلنگ کے شبہ میں تین نوجوانوں کی پٹائی کی۔ اس کے بعد موقع پر پہنچی پولیس نے بھی تینوں کو ڈنڈوں سے پیٹا۔ بتایا گیا ہے کہ ان نوجوانوں کو گاؤ اسمگلنگ کے شبہ میں گاؤں کے گئو رکشوں نے اس وقت پکڑا تھا، جب یہ نوجوان گاؤں قریب واقع دریا میں نہا رہے تھے۔

گائے اسمگلنگ کے شک میں تین نوجوانوں کی پٹائی کا ویڈیو وائرل ، پولیس نے جانچ کا دیا حکم

اسی دوران گاؤں کے پرسو قبائلی کے گھر 18 جانور بندھے ہوئے پائے گئے تھے۔ دیہاتیوں نے ان نوجوانوں پر گاؤ اسمگلنگ کرکے لانے کا شک ظاہر کرتے ہوئے ان پٹائی کر دی۔

ادھر اطلاعات کے بعد موقع پر پہنچی پولیس نے بھی انہیں گائے کی اسمگلنگ کے الزام میں جیل بھیج دیا ہے۔ اگرچہ مار پیٹ کا ویڈیو وائرل ہوتے ہی ایس پی نے تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز