بیف کے شک میں علیم الدین کو مارنے والے مجرموں کا مرکزی وزیر نے کیا خیرمقدم

مرکزی وزیر جینت سنہا نے جمعہ کو رام گڑھ موب لنچنگ کیس کے آٹھ مجرموں کا خیرمقدم کیا اور انہیں مالا پہنائی۔

Jul 07, 2018 10:50 AM IST | Updated on: Jul 07, 2018 10:53 AM IST

مرکزی وزیر جینت سنہا نے جمعہ کو رام گڑھ موب لنچنگ کیس کے آٹھ مجرموں کا خیرمقدم کیا اور انہیں مالا پہنائی۔ بتا دیں کہ گزشتہ سال 27 جون کو تقریبا 100 گئو رکشکوں کی بھیڑ نے مویشی تاجر علیم الدین انصاری کو ہزاری باغ ضلع کے رام گڑھ میں دن دہاڑے مار ڈالا تھا۔  جینت سنہا ہزاری باغ لوک سبھا سیٹ سے رکن پارلیمنٹ ہیں۔ بھیڑ کے ذریعہ پیٹ پیٹ کر مار ڈالے جانے کے اس معاملہ میں فاسٹ ٹریک کورٹ نے ریکارڈ پانچ مہینہ میں سماعت کرتے ہوئے اس سال 21 مارچ کو 11 افراد کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔

مرکزی وزیر جینت سنہا نے اس معاملے میں پولیس کی تحقیقات پر سوال اٹھائے ہیں۔ فاسٹ ٹریک عدالت سے سزا پانے کے بعد سبھی ملزمین نے جھارکھنڈ ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا۔ یہاں سے8 لوگوں کو 29 جون کو ضمانت مل گئی۔ بدھ کو یہ لوگ جے پرکاش نارائن سینٹرل جیل سے باہر آئے تھے۔ یہاں سے وہ براہ راست جینت سنہا کے گھر گئے تھے جہاں وزیر نے انہیں مالا پہنائی۔ یہ لوگ بی جے پی او بی سی مورچہ کے صدر امردیپ یادو کی قیادت میں سنہا کے گھر گئے تھے۔

بیف کے شک میں علیم الدین کو مارنے والے مجرموں کا مرکزی وزیر نے کیا خیرمقدم

مرکزی وزیر جینت سنہا نے اس معاملے میں پولیس کی تحقیقات پر سوال اٹھائے ہیں ۔

امردیپ یادو نے بتایا کہ، "جینت سنہا ہمیشہ یہ مانتے تھے کہ یہ لوگ معصوم ہیں اور انہیں پھنسایا گیا ہے۔ اس وجہ سے انہوں نے اپنی حیثیت کے مطابق ان لوگوں کی قانونی اور مالی مدد کی۔ معصوم افراد کی حمایت کرنے میں کچھ بھی غلط نہیں ہے۔ تین دیگر قیدیوں کا حوالہ دیتے ہوئے یادو نے امید ظاہر کی کہ انہیں بھی ہائی کورٹ سے ضمانت مل جائے گی۔

یادو نے دعوی کیا، "جینت سنہا نے خود اس معاملے کے کاغذات دیکھے ہیں اور وکلاء سے بات کی ہے۔" 'نیوز 18' نے جینت سنہا سے بات کرنے کی کوشش کی مگر ان کے دفتر نے جواب دیا کہ وہ مصروف ہیں اور ردعمل نہیں دے پائیں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز