مسلم خواتین کو انصاف ملنا ہی چاہئے، مرکز اس معاملے کو لے کر حساس: مرکزی وزیر

Apr 19, 2017 01:45 PM IST | Updated on: Apr 19, 2017 01:45 PM IST

گنا۔  اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی طرف سے تین طلاق کا موازنہ دروپدي کے چيرهرن سے کرنے کی بات پر مرکزی وزیر نریندر سنگھ تومر نے کہا ہے کہ مسلم خواتین کو انصاف ملنا ہی چاہئے اور مرکزی حکومت اس معاملے پر بہت حساس ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی حساسیت کا نتیجہ جلد ہی دیکھنے کو ملے گا۔ مدھیہ پردیش کے گنا میں کل نامہ نگاروں سے بات چیت کے دوران انہوں نے رام مندر کی تعمیرسے متعلق سوال پر کہا کہ فی الحال یہ معاملہ سپریم کورٹ میں ہے، لیکن مندر کی تعمیر ہونی چاہئے۔

اس دوران انہوں نے ریاست میں وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان کے کاموں اور پالیسیوں کی تعریف کی۔ وہیں ایک اور پروگرام میں پارٹی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر تومر نے کہا کہ دیگر پارٹیاں جہاں ذات، خاندان، زبان اور علاقائیت کی سیاست کرتی ہیں، وہیں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) واحد ایسی پارٹی ہے جو صرف قوم کے لئے کام کرتی ہے۔ پارٹی کی منزل اقتدار نہ ہوکر کہیں اوپر ہے۔ اب گجرات، ہماچل پردیش اور کرناٹک میں انتخابات جیت کر کیرل، مغربی بنگال اور اڑیسہ میں بی جے پی اپنا پرچم بلند کرےگی۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر کی ملک کی تعمیر میں شراکت ہے، تو انہیں ماننا کہاں غلط ہے، لیکن کانگریس کے پیٹ میں یہ سوچ کر درد ہوتا ہے کہ کہیں پارٹی کی زمین نہ کھسک جائے۔

مسلم خواتین کو انصاف ملنا ہی چاہئے، مرکز اس معاملے کو لے کر حساس: مرکزی وزیر

علامتی تصویر

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز