چین نے مسلمانوں کے بچوں کے یہ 'اسلامی نام' رکھنے پر عائد کی پابندی

Apr 25, 2017 09:53 PM IST | Updated on: Apr 25, 2017 09:53 PM IST

بیجنگ۔ مذہبی تعصب روکنے کے لئے چین نے سخت رخ اپنایا ہے۔ چین نے سورش زدہ مسلم اکثریتی زنجیانگ  صوبے سے تعلق رکھنے والے بچوں کے نام 'صدام' اور 'جہاد' رکھنے پر روک لگا دی ہے۔ ہیومن رائٹس واچ نے کہا ہے کہ زنجیانگ کے حکام نے حال ہی میں درجن بھر ایسے ناموں پر پابندی لگا دی ہے جو مسلمانوں میں بہت عام ہیں۔

چین نے اسلام، قرآن، مکہ، جہاد، امام، صدام، حج اور مدینہ جیسے نام رکھنے پر روک لگا دی ہے۔ ممنوعہ ناموں کی فہرست سے اگر کسی بچے کا نام رکھا جاتا ہے تو اسے ریاست کی طرف سے ملنے والی سہولیات سے دور رکھا جائے گا۔ چین نے یہ قدم اس علاقے میں دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے خطرے سے نمٹنے کے لئے اٹھایا ہے۔ یہ صوبہ اقلیتی اویغور مسلم کمیونٹی کا گڑھ سمجھا جاتا ہے۔ زنجیانگ علاقے میں تقریبا ایک کروڑ ایغور مسلمان رہتے ہیں۔

چین نے مسلمانوں کے بچوں کے  یہ 'اسلامی نام' رکھنے پر عائد کی پابندی

علامتی تصویر

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز