روہنگیا بحران سے نمٹنے میں دوستی کی خاطر بنگلہ دیش کی مدد کرے گا چین ، آپسی بات چیت سے حل کا مشورہ

Nov 19, 2017 03:47 PM IST | Updated on: Nov 19, 2017 04:17 PM IST

ڈھاکہ : روہنگیا بحران سے نمٹنے میں چین نے بنگلہ دیش سے دوستی نبھانے کا وعدہ کیا ہے ۔ ہفتہ کو بنگلہ دیش نے کہا ہے کہ روہنگیا مسلمانوں کو واپس میانمار بھیجنے کیلئے چین کو اس کی مدد کرنی چاہئے ۔ میانمار پر دباو بنانے کیلئے جلد ہی ڈھاکہ اور چین کے سینئر سفارت کاروں کے ساتھ میٹنگ ہوگی ۔خیال رہے کہ تقریبا 6 لاکھ روہنگیا مسلمانوں نے بنگلہ دیش میں پناہ لے رکھی ہے اور کیمپوں میں اپنی زندگی گزر بسر کررہے ہیں ۔ ان کے انتظام انصرام کو لے کر بنگلہ دیش حکومت پر دباو بنا ہوا ہے۔

ساتھ ہی ساتھ چین نے یہ بھی کہا ہے کہ بنگلہ دیش اور میانمار کو آپسی بات چیت کے ذریعہ پناہ گزینوںکا مسئلہ حل کرنے کی کوشش کرنی چاہئے اور عالمی برادری کا انتظار نہیں کرنا چاہئے ۔ چینی وزیر خارجہ وانگ ژی نے ڈھاکا میں چینی سفارت خانے میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میانمار اور بنگلہ دیش کو اس بحران کے حل کے لیے کسی بین الاقوامی پیش رفت کا انتظار نہیں کرنا چاہیے۔ چینی وزیر خارجہ نے کہا کہ اس بحران کے حل کی کوششوں میں بین الاقوامی برادری کو لا کر معاملے کو پیچیدہ بنانے کی بجائے دو طرفہ بات چیت کا راستہ اپنایا جانا چاہیے۔

روہنگیا بحران سے نمٹنے میں دوستی کی خاطر بنگلہ دیش کی مدد کرے گا چین ، آپسی بات چیت سے حل کا مشورہ

بنگلہ دیش کے وزیر خارخارجہ اے ایچ محمود علی نے چینی وزیر خارجہ سے ملاقات کی ۔ اس د وران دونوں لیڈروں کے مابین روہنگیا بحران سے نمٹنے پر بھی تبادلہ خیال ہوا ۔ امید کی جارہی ہے کہ اس میٹنگ کا کوئی مثبت نتیجہ سامنے آئے گا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز