چین کی ہندستان اور پاکستان کے درمیان قیام امن کےلئے ثالثی کی پیش کش

Jul 12, 2017 08:34 PM IST | Updated on: Jul 12, 2017 08:34 PM IST

بیجنگ : اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ ہندستان اور پاکستان کے درمیان کشیدگی، خطہ میں امن او ر استحکام پر اثر انداز ہوسکتی ہے، چین نے دونوں ملکو ں کے درمیان تعلقات کو بہتر بنانے میں ایک’ تعمیری رول‘ اداکرنے کی پیش کش کی ہے۔ چینی وزارت خارجہ کے ترجمان جینگ شوانگ نے یہاں نامہ نگاروں کو بتایا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ دونوں متعلقہ فریق ایسی بہت سی کوششیں کرسکتے ہیں جوخطہ میں امن اور استحکام کے لئے ساز گار اور کشیدگی میں اضافہ سے گریز میں معاون ہوں۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر کی صورتحال نے بین الاقوامی برادری کی توجہ کھینچی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ لائن آف کنٹرول کے قریب کشیدگی کا ماحول ہے، جو خطہ کے امن اور استحکام پر اثر انداز ہوسکتا ہے۔ مسٹر کنگ نے ان خیالات کا اظہار اس وقت کیا جب ان سےہندستان اور پاکستان کے درمیان کشیدگی کے بارے میں دریافت کیا گیا۔ ہندستان کا ہمیشہ سے یہ موقف رہا ہے کہ ہندستان اور پاکستان کے درمیان شملہ اور لاہور جیسے باہمی معاہدوں کی روشنی میں کسی تیسرے فریق کی ثالثی کی کوئی گنجائش نہیں ہے ۔

چین کی ہندستان اور پاکستان کے درمیان قیام امن کےلئے ثالثی کی پیش کش

ہندستانی خارجہ سکریٹری ایس جے شنکر نے کل سنگاپور میں کہا تھا کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ جب ہندستان اور پاکستان کے درمیان سرحدی اختلاف پیدا ہوئے ہوں۔ ایک لیکچر دیتے ہوئے ڈاکٹر جے شنکر نے کہا کہ پچھلے مہینہ آستانہ میں ملاقات کے دوران وزیراعظم نریندر مودی اور چینی صدر جی جن پنگ نے یہ تسلیم کیا تھا ہندستان اور چین کی یہ کوشش ہونی چاہئے کہ ان کے مابین اختلافات تنازعہ میں نہ بدلنے پائیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز