پابندی کے بعد سوچ سمجھ کر فیصلہ کرے شمالی کوریا: چین

Aug 07, 2017 01:52 PM IST | Updated on: Aug 07, 2017 01:52 PM IST

منیلا۔  چین کے وزیر خارجہ وانگ یی نے متنازعہ جوہری اور میزائل پروگرام کی وجہ سے پہلے ہی الگ تھلگ پڑے شمالی کوریا سے 'سوچ سمجھ کر ' فیصلہ کرنے کی اپیل کی ہے۔ مسٹر وانگ نے یہ اپیل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی طرف سے کل ایک قرارداد منظور کرکے شمالی کوریا پر نئی پابندیاں لگائے جانے کے بعد کی ہے۔ فلپائن کے دارالحکومت منیلا میں علاقائی سیکورٹی فورم سے پہلے شمالی کوریا کے وزیر خارجہ ری ہانگ یو سے پابندیوں پر بات چیت کے بعد مسٹر وانگ نے یہ بات کہی۔ مسٹر وانگ نے کہا کہ یہ بات چیت دوست ملک شمالی کوریا کو صحیح اور 'دانشمندی پر مبنی ' فیصلہ کرنے میں مدد کرے گی۔ مسٹر وانگ نے بتایا کہ کم جونگ ان کی حکومت کے خلاف امریکہ کی فوجی کارروائی کا متبادل کھلا ہونے کے بعد اس کے حل کے لئے بات چیت جاری ہے۔

چینی وزیر خارجہ نے کہا، "جزیرہ نما کوریا کے مسئلے کو حل کرنے کے لئے بات چیت ہی واحد مناسب متبادل ہے۔" منیلا میں 10 آسیان ممالک کے اجلاس میں شرکت کے لئے آئے امریکہ کے وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن نے شمالی کوریا پر دباؤ بنانے کی مانگ کی ہے ۔ اس سے پہلے 15 رکنی سلامتی کونسل نے امریکہ کی جانب سے تیار کی گئ ایک تجویز کو کل متفقہ طور پر منظور کر کے شمالی کوریا پر نئی پابندیاں لگانے کا اعلان کیا ہے۔ یہ کارروائی شمالی کوریا کی طرف سے جولائی ماہ میں دو بار بین البراعظمی بیلسٹک میزائل کا تجربہ کرنے کی وجہ سے کی گئی ہے۔

پابندی کے بعد سوچ سمجھ کر فیصلہ کرے شمالی کوریا: چین

شمالی کوریا کے لیڈر کم جونگ ان: تصویر، رائٹرز

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز